انکم ٹیکس کی عدم ادائیگی کے نوٹس کے خلاف حمزہ شہباز کی درخواست پر ہائی کورٹ میں سماعت

لاہور: ہائی کورٹ میں حمزہ شہباز کی جانب سے انکم ٹیکس کی عدم ادائیگی کے نوٹس کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی۔

لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس عابد عزیز شیخ نے اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی جانب سے انکم ٹیکس کی عدم ادائیگی کے نوٹس کے خلاف شاہد پرویز جامی ایڈووکیٹ کی وساطت سے دائر درخواست پر سماعت کی۔

سماعت کے موقع پر عدالت نے کہا کہ انکم سپورٹ لیوی ایکٹ کے خلاف فیصلہ آچکا ہے ۔اور معاملہ دورکنی بنچ میں زیر سماعت ہے عدالت ایسے میں مناسب ہے کہ کیس دورکنی بنچ ہی سنے۔

درخواست گزار کا مؤقف ہے کہ وہ طویل عرصے سے سیاست میں ہیں، اس وقت وہ اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی ہے، وہ اور ان خاندان باقاعدگی سے انکم ٹیکس ادا کرتا ہے، وہ کبھی بھی انکم ٹیکس کا نادہندہ نہیں رہے ہیں۔

 درخواست گزار کے مطابق کمشنر ان لینڈ ریونیو نے انہیں 2014 کا ایک کروڑ 20 لاکھ 8 ہزار کے انکم ٹیکس کی ادائیگی کا نوٹس بھیجا ہے، یہ نوٹس 24 کروڑ 27 لاکھ 29 ہزار مالیت کی پراپرٹی رکھنے پر بھیجا گیا ہے۔

درخواست گزار استدعا کی کہ انہیں نوٹس دینے سے قبل سنا نہیں گیا ہے، عدالت دو مئی 2019 کے بھیجے گئے اس نوٹس پر عمل درآمد معطل کرے، عدالت ایف بی آر کو اس کے خلاف ممکنہ تادیبی کاروائی کرنے سے روکے۔

عدالت نے درخواست دو رکنی بنچ کو سماعت کے لئے بھجوا کر سماعت ملتوی کردی۔