جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

حیدر آباد میں تبلیغی جماعت کے 36 ارکان میں کورونا کی تصدیق

جماعت

حیدر آباد میں حکام نے تبلیغی جماعت کے 36 ارکان کے کورونا وائرس کے ٹیسٹ مثبت آنے کی تصدیق کردی۔

سندھ کی وزیر صحت و بہبود آبادی کی میڈیا کوآرڈی نیٹر میران یوسف کے مطابق حیدر آباد میں اس وقت کووڈ-19 (کورونا وائرس) کے کیسز کی تعداد43 ہوگئی ہے جن میں سے 36 کیسز تبلیغی جماعت کے ارکان سے متعلق ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ نئے کیسز نورمسجد سے رپورٹ ہوئے ہیں جہاں پہلے ہی تبلیغی جماعت کے 200 ارکان کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔

خیال رہے کہ حیدر آباد کی نور مسجد سندھ میں تبلیغی جماعت کا دوسرا بڑا مرکز ہے جس کو گزشتہ ہفتے 19 سالہ چینی نژاد تبلیغی رکن میں وائرس مثبت آنے کے بعد سیل کردیا گیا تھا۔

حکومت نے مسجد کے اندر موجود تمام افراد کے نمونے حاصل کرکے ٹیسٹ کے لیے بھیج دیے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق حیدر آباد میں اس وقت تبلیغی جماعت کے 830 اراکین موجود ہیں۔

ڈی آئی جی حیدر آباد رینج نسیم شیخ کا کہنا تھا کہ ‘حیدر آباد کی نور مسجد میں 830 میں سے یہ 234 افراد ہیں’۔

انتظامیہ نے نور مسجد میں موجود تبلیغی جماعت کے ارکان سے نمونے حاصل کرنے کے بعد 90 افراد کو سکھر میں لیبر کالونی فلیٹس میں منتقل کردیا تھا جس کو قرنطینہ مرکز بنایا گیا ہے۔

دیگر 70 متاثرہ افراد کو قرنطینہ کے لیے راجپوتانہ ہسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔

حیدرآباد: تبلیغی جماعت کاعلاقائی مرکز قرنطینہ قرار، 210 اراکین موجود

تبلیغی جماعت سے منسلک افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد سندھ کے شہریوں میں خوف پیدا ہوا جبکہ 11 مارچ سے 15 مارچ کے دوران لاہور کے رائیونڈ میں اجتماع ہوا تھا جس کے بعد جماعت کے اراکین میں وائرس مثبت آنے رپورٹس سامنے آئیں۔

حیدر آباد کے علاقے قاسم آباد کے رہائیشیوں نے اسی خوف کی وجہ سے پولیس کو مکی مسجد میں تبلیغی جماعت کے ارکان کی موجودگی سے پولیس کو آگاہ کیا جن کو مسجد کے اندر تک محدود کردیا گیا۔

انتظامیہ کا کہنا تھا کہ مکی مسجد ان کے لیے قرنطینہ قرار دی جائے گی۔

متعلقہ خبریں