جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

میں نے اپنے کاروبار اور وزیراعظم کے بیٹوں کی فیکٹریوں پر سپر ٹیکس لگایا ہے: وزیر خزانہ

مفتاح

اسلام آباد: مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کے بیٹوں کی فیکٹریوں پر سپر ٹیکس لگایا گیا، میں نے اپنے کاروبار پر بھی بہت زیادہ ٹیکس لگایا ہے۔

وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا اپنے ایک بیان میں کہنا تھا کہ پاکستان اپنے تمام بین الاقوامی مالیاتی وعدوں کو پورا کرے گا، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کنٹرول نہ کیا تو ڈیفالٹ کر جائیں گے، تحریک انصاف نے خسارے کے 4بجٹ دئیے، رواں سال پاکستان کا تجارتی خسارہ تاریخ کا سب سے بڑا خسارہ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں: ہم آہستہ آہستہ لاکھوں دکانوں کو ٹیکس نیٹ میں لارہے ہیں: مفتاح اسماعیل

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ امیر افراد پر سپر ٹیکس لگایا ہے تو اتنی پریشانی کیوں ہے؟، ملک ڈیفالٹ کے دہانے پر تھا تو حکومت کو کیا کرنا چاہیے تھا؟، وزیراعظم کے بیٹوں کی فیکٹریوں پر سپر ٹیکس لگایا گیا ہے، میں نے اپنے کاروبار پر بھی بہت زیادہ ٹیکس لگایا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امیروں کو آگے آکر قربانی دینا ہو گی، رواں سال پاکستان کا ٹیکس ٹو جی ڈی پی تناسب 8.6فیصد ہوگا، پاکستان کا ٹیکس ٹو جی ڈی پی تناسب دنیا میں کم ترین ہے، رواں سال پاکستان کا پرائمری خسارہ تقریباً 1600ارب روپے ہوگا۔

متعلقہ خبریں