جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

نارووال اسپورٹس سٹی کیس کی انکوائری، انویسٹیگیشن میں تبدیل، مجھے عمران خان کے حکم پر گرفتار کیا گیا : احسن اقبال

مجھے عمران خان کے

اسلام آباد : عدالت نے احسن اقبال کیخلاف انکوائری کو انویسٹیگیشن میں تبدیل کر دیا، احسن اقبال کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم کو مسلم لیگ (ن) کی تنقید پسند نہیں، مجھے عمران خان کے حکم پر گرفتار کیا گیا۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں نارووال اسپورٹس سٹی کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت کے جج محمد بشیر نے احسن اقبال کیخلاف انکوائری کو انویسٹیگیشن میں تبدیل کر دیا گیا۔

سماعت کے موقع پر احسن اقبال خود روسٹرم پر آئے اور کہا کہ میڈیا میں نیب والے میری کردار کشی کر رہے ہیں۔ جج محمد بشیر نے کہا کہ میڈیا والی باتوں کا جواب باہر جا کر میڈیا پر ہی دیں۔

احسن اقبال نے کہا کہ ایک سال ہو گیا یہ لوگ میرے خلاف تحقیقات کر رہے ہیں۔ میرے خلاف ریفرنس نہیں ہے تو کیس خارج کیا جائے۔ نیب کہتا ہے عدالتیں فیصلے نہیں کررہی اور ریفرنس خود نہیں لاتے۔

یہ بھی پڑھیں : مریم اورنگزیب کا ماسک پہننا لازمی قرار دینے کا مطالبہ

احسن اقبال کے وکیل نے اخبار بھی عدالت میں پیش کر دی۔ وکیل نے کہا کہ نیب نے اعلامیہ جاری کیا کہ عدالتوں میں جلد فیصلوں کے لئے درخواستیں دائر کریں گے۔

نیب نے پیشرفت رپورٹ احتساب عدالت میں پیش کر دی۔ نیب کا کہنا ہے کہ کورونا کے باعث تحقیقات میں دیر ہو رہی ہے۔ تحقیقات مکمل ہونے کے بعد ریفرنس دائر کر دیں گے۔

جج محمد بشیر نے ریمارکس دیئے کہ بتائیں ریفرنس دائر کرنا ہے یا یہ کیس خارج کر دیں۔

احسن اقبال نے احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کو مسلم لیگ (ن) کی تنقید پسند نہیں، مجھے عمران خان کے حکم پر گرفتار کیا گیا۔ یہ جھوٹ کو سچ ثابت کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نیب کو مسلم لیگ (ن) کے خلاف استعمال کیا جارہا ہے۔ حکومت کو کورونا وائرس کے پیچھے چھپنے نہیں دیں گے۔ نیب آج تک کوئی ایک الزام ثابت نہ کرسکا۔ نیب نے تسلیم کیا کہ مجھ پر کوئی مالی کرپشن کا الزام نہیں۔

متعلقہ خبریں