جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

اگر گردشی قرضہ رہا تو دفاعی بجٹ کیلئے بھی حکومت کے پاس پیسے نہیں ہوں گے : بلاول

اگر گردشی قرضہ

کراچی : بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ گردشی قرضہ اگر ایسا ہی رہا تو ترقیاتی بجٹ تو دور کی بات دفاعی بجٹ کیلئے بھی حکومت کے پاس پیسے نہیں ہوں گے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ایک بار پھر وفاقی حکومت کی معاشی پالیسیوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

بلاول بھٹو نے جاری بیان میں کہا کہ حکومت کے شاہانہ اخراجات اٹھائیس سالہ ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ ہوچکے ہیں۔ حکومت قرضے لے کر اپنی آمدنی سے دس کھرب روپے زیادہ خرچ کرچکی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : قرض 18 کھرب تک پہنچ گیا، ہر پاکستانی 1 لاکھ 75 ہزار کا مقروض ہے : شیری رحمان

ہر پاکستانی پونے دو لاکھ روپے حکومتی قرضے کا مقروض ہے۔ ترقیاتی پروگرام کا چالیس فیصد حصہ خرچ ہوگا تو معاشی ترقی کے اہداف کیسے پورے ہوں گے؟ حکومت اب تک تینتیس ارب ڈالر سے زائد کا غیرملکی قرضہ لے چکی ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ گردشی قرضہ تین سو پچاس ارب روپے سے زیادہ ہوچکا ہے۔ اگر ایسا ہی رہا تو ترقیاتی بجٹ تو دور کی بات دفاعی بجٹ کیلئے بھی حکومت کے پاس پیسے نہیں ہوں گے۔

متعلقہ خبریں