جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

غیر قانونی بستیوں کا قیام جاری، اسرائیل کا 6 ہزار نئے گھر تعمیر کرنے کا اعلان

6 ہزار

تل ابیب : اسرائیل نے اقوام متحدہ کی قراردوں کو نظر انداز کرتے ہوئے یہودیوں کیلئے 6 ہزار نئے گھر تعمیر کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

اقوام متحدہ اور عالمی قوانین کی پرواہ کیئے بغیر اسرائیلی حکومت نے مقبوضہ بیت المقدس کے اطراف میں نئی غیر قانونی یہودی بستیوں کے لئے 6 ہزار نئے گھر تعمیر کرنے کی منظوری دیدی ہے۔

دوسری طرف فلسطین کی وزارت خارجہ اسرائیلی ارادے کی مذمت کرتے ہوئے عالمی طاقتوں سے فوری مداخلت اور مزید غیر قانونی یہودی بستیوں کی تعمیر رکوانے کا مطالبہ کیا ہے۔

اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے۔ صیہونی فوجیوں نے رات میں مقبوضہ فلسطین کے علاقے بئر ایوب میں فلسطینیوں پر آنسو گیس کے شیل داغے اور ربر کی گولیاں فائر کر کے 63 فلسطینیوں کو زخمی کردیا، جواب میں فلسطینیوں نے صیہونیوں پر پتھراؤ بھی کیا۔

یہ بھی پڑھیں : ایپل کا اسرائیلی کمپنی پر جاسوسی کا الزام، مقدمہ دائر

اسرائیل کی جارحیت فلسطینیوں تک ہی محدود نہیں بلکہ شام میں بھی حملوں کا سلسلہ جاری رکھا ہے۔ صیہونی افواج نے حمص میں 12 میزائل داغے، جس میں سے 10 میزائلوں کو شام کے فضائی دفاعی سسٹم نے ناکام بنادیا۔ مقامی حکام کا کہنا ہے کہ اس حملے میں شام کا ایک فوجی زخمی ہوا ہے۔

ادھر اسرائیل ایران کے خلاف بھی ہرزاہ سرائی سے باز نہیں آرہا، اسرائیلی وزیراعظم نے ایک تقریب سے خطاب میں کہا کہ ایران کے ساتھ اسرائیل کا تصادم پوری دنیا کی ایک انتہا پسند حکومت کے خلاف جنگ ہے، جو ایک جوہری چھتری کے نیچے شیعہ تسلط کی تلاش میں ہے۔ ہمیں امید ہے کہ دنیا اسے نظر انداز نہیں کرے گی، لیکن اگر انہوں نےایسا کیا تو ہم ایسا نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل ایران کے خلاف کارروائی کرنے کی اپنی آزادی کو برقرار رکھے گا، چاہے امریکہ 2015 کے ایران معاہدے پر واپس آجائے۔

متعلقہ خبریں