جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

امپورٹ بند ہونے سے خسارہ کم ہوا، یہ کریڈٹ نہیں ڈس کریڈٹ ہے : مریم اورنگزیب

مریم اورنگزیب امپورٹ بند

لاہور : مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کمی کریڈٹ نہیں ڈس کریڈٹ ہے۔ امپورٹ بند ہونے سے کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہوا۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے وزیراعظم عمران خان کے معیشت پر ٹویٹ پر ردعمل پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ جھوٹ بولنے سے معیشت بہتر نہیں ہوتی۔ معیشت ایسی سمت چلی گئی ہے، جہاں سے اس کی واپسی ناممکن ہے۔ آپ کی طرح معیشت بھی کسی گمنام سمت محو پرواز ہے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ آپ کی معاشی سمت یہ ہے کہ مہنگائی 14 فیصد پر ہے۔ معاشی سمت کا کمال ہے کہ 5.8 فیصد ترقی کی شرح ایک سال میں اڑھائی فیصد کردی۔ آج ٹیکس وصولیوں کا تاریخی خسارہ ہے۔ کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کمی کریڈٹ نہیں ڈس کریڈٹ ہے۔

یہ بھی پڑھیں : معیشت ٹریک پر آگئی، چار سال بعد کرنٹ اکاؤنٹ سرپلس ہوگیا : وزیر اعظم

ترجمان ن لیگ نے کہا کہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کمی برآمدات کی وجہ سے نہیں بلکہ درآمدات کے نہ ہونے کی بناء پر ہے۔ روزگار، کاروبار، دکان، فیکٹری اور صنعت بند ہے تو امپورٹ بند ہونے سے کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہوا۔ روپے کی قدر میں 30 فیصد کمی ہوئی۔ ایک سال میں آپ نے ابھرتی معیشت کو تباہ کردیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ روپے کی تاریخی بے قدری کے باوجود رواں مالی سال کے چار ماہ میں برآمدات میں چار فیصد سے بھی کم اضافہ ہوسکا۔ حکومت برآمدات میں کوئی نمایاں بہتری میں مکمل طورپر ناکام رہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایک ٹویٹ کرکے قوم کو بتائیں کہ ایک سال میں کتنے کارخانے اور فیکڑیاں بند ہوچکی ہیں۔ آپ کی ’بے سمتی‘ کی وجہ سے کتنے لاکھ لوگ بیروزگاری کے جہنم میں گرچکے ہیں۔ معیشت کی ”بہتری“ آج 300 روپے فی کلو ٹماٹر کی صورت میں قوم بھگت رہی ہے۔

متعلقہ خبریں