جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

عمران خان کی دھمکیاں نہیں چلیں گی، غیر مشروط بیٹھنا ہے تو بیٹھے : رانا ثناءاللہ

غیر مشروط بیٹھنا

لاہور : وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ اس نے جلسے اور لانگ مارچ کی ناکامی کی فرسٹریشن میں اسمبلیاں توڑنے ہی دھمکی دی ہے، مشروط بات نہیں ہو سکتی، غیر مشروط بیٹھنا ہے تو بیٹھے۔

وفاقی وزیر برائے داخلہ رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ پونے چار سال اس نے اپوزیشن سے اس نے ہاتھ تک نہیں ملایا۔ پلوامہ کے واقعے پر اہم بریفنگ میں ڈیڑھ گھنٹے اس کا انتظار کرتے رہے۔ زرداری صاحب اور شہباز شریف سمیت تمام اہم شخصیات اس بریفنگ میں تھے، مگر اس نے ضد پکڑی ہوئی تھی کہ میں نہیں آؤں گا۔

انہوں نے کہا کہ دھمکیاں دے کر اسٹیبلشمنٹ سے الیکشن کی تاریخ لینا چاہتا تھا نہیں لے سکا۔ سیاسی طریقے سے رابطہ کرے اور بنا دھمکیوں کے مذاکرات کی بات کرے۔ 2014 سے ہر بات پر دھمکی دے رہا ہے، 25 مئی 2022 سے بھی اسی کام پر لگا ہوا ہے۔ اب ہم بھی اس بات پر ہیں کہ چھلانگ لگانی ہے تو لگاؤ۔

یہ بھی پڑھیں : معیشت عطا تارڑ کی شاعری اور رانا ثناءاللہ کی دھمکیوں سے ٹھیک نہیں ہوسکتی : مسرت چیمہ

ان کا کہنا تھا کہ مشروط بات نہیں ہو سکتی، غیر مشروط بیٹھنا ہے تو بیٹھے۔ اس نے مذاکرات کی بات کی مشروط بھی اور ساتھ میں دھمکی بھی دی۔ تیسری قوت کو یہ چھ مہینے سے گالیاں اور بلیک میل کر رہا کہ الیکشن کی تاریخ لے کر دیں۔ اس نے جلسے اور لانگ مارچ کی ناکامی کی فرسٹریشن میں اسمبلیاں توڑنے ہی دھمکی دی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ یہ ملک ان کی پالیسیوں کی وجہ سے ڈیفالٹ کی طرف جا رہا تھا۔ ہم نے ملک کو سنبھالا ملک کو ڈیفالٹ سے بچایا۔ کوشش ہے کہ معیشت کی بدحالی سے ملک جلد باہر آئے اور لوگوں کو ریلیف ملے گا۔ 4 سال سے معاشی تباہی جو ہوئی ہم اسے روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں