جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

انسانی حقوق کی ایک تنظیم کا ڈونلڈ ٹرمپ کیخلاف مقدمہ درج

ڈونلڈ

واشنگٹن: ٹرمپ انتظامیہ کے خلاف مظاہرین کے حقوق کی پامالی کا مقدمہ درج کرلیا گیا، یہ مقدمہ امریکا میں انسانی حقوق کی ایک تنظیم نے درج کرایا ہے، جس میں ٹرمپ انتظامیہ اور وائٹ ہاؤس کے حکام کو فریق بنایا گیا ہے۔

امریکا میں انسانی حقوق کی تنظیم ‘امیریکن سول لبرٹی یونین’ نے ٹرمپ انتظامیہ پر مظاہرین کے حقوق کا خیال نہ رکھنے اور انہیں زبردستی منتشر کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے عدالت سے رجوع کرلیا ہے۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ اس ہفتے کے واشنگٹن کے لفاٹے پارک میں حکام نے پرامن مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے طاقت کا بے جا استعمال کیا جو پر امن احتجاجی مظاہرین کے حقوق کی سراسر خلاف ورزی ہے۔

لفاٹے پارک واشنگٹن میں جس وقت بڑی تعداد میں مظاہرین جمع تھے اسی دوران مریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ وائٹ ہاؤس سے سینٹ جارج چرچ جانا چاہتے تھے اور اس کے لیے حکام نے راستے کو خالی کرانے کا حکام دیا۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے پر امن احتجاجی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے طاقت کا استعمال کیا۔ حکام نے پیپر بالز سمیت آنسو گیس کے شیل استعمال کیے تھے۔

انسانی حقوق کی تنظیم اے سی ایل یو نے بلا اشتعال اس کارروائی کو ”مظاہرین پر حملے”سے تعبیر کیا ہے۔عدالت میں دائر کردہ درخواست میں امریکی اٹارنی جنرل ولیم بار اور وائٹ ہاؤس کے دیگر سینئر حکام پر غیر قانونی کارروائی کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

درخواست میں اس کارروائی کو مظاہرین کے ہجوم پر بلا اشتعال مربوط حملہ قرار دیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں