جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

آو آئی سی نے مسئلہ کشمیر پر آج تک کچھ نہیں کیا، پاکستان آو آئی سی سے باہر نکلے : رضا ربانی

آو آئی سی نے مسئلہ

اسلام آباد : رضا ربانی نے کہا ہے کہ پاکستان کو آو آئی سی کی ممبر شپ کچھ وقت کے لیے معطل کردینی چاہیے، آو آئی سی نے مسئلہ کشمیر پر آج تک کچھ بھی نہیں کیا۔

سینیٹ میں پیپلز پارٹی کے سینیٹر میاں رضا ربانی نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ دنیا مقبوضہ کشمیر میں بچے کی تصویر کو دیکھ کر شاک میں آئی، بچوں اور خواتین کو ریپ کا نشانہ بنایا گیا اور نوجوانوں پیلٹ گن سے اندھا کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ بین القوامی اسٹیبلشمنٹ بچوں کی مسکراہٹ اور مستقبل چھین رہی ہے، کشمیری عوام انڈین بندوقوں کے خلاف لڑرہے ہیں، کشمیریوں کی نسل کشُی اور جغرافائی تبدیل کی جارہی ہے، گزشتہ سال میں ہندوؤں کو کشمیر میں آباد کیا گیا، ذرائع ابلاغ پر مکمل پابندی لگائی گئی۔

یہ بھی پڑھیں : بھارت نے کورونا کو بہانہ بناکر مقبوضہ کشمیر میں مظالم بڑھائے : شیری رحمان

ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے جو نقشہ جاری کیا اس میری پارٹی کا مؤقف نہیں آیا، جب پچاس پیسے کا زمانہ یہی نقشہ موجود تھا جو گزشتہ دن جاری ہوا، گزشتہ دن کے اجلاس کے لیے اپوزیشن کو اعتماد میں نہیں لیا صرف انفارم کیا، وزیراعظم کو کابینہ کے اجلاس کی بجائے نقشے کا سینیٹ میں اعلان کرتے تو بہتر ہوتا۔

رضا ربانی نے کہا کہ پیپلز پارٹی مودی کے رام مندر کی مذمت کرتے ہیں، اسلام اباد میں مندر تعمیر کرنے کی تاحال اجازت نہیں دی گئی، پاکستان کو آو آئی سی کی ممبر شپ کچھ وقت کے لیے معطل کردینی چاہیے، آو آئی سی نے مسئلہ کشمیر پر آج تک کچھ بھی نہیں کیا،۔

انہوں نے کہا کہ خطے کی صورتحال تیزی سے تبدیل ہورہی ہے، ایران اور چین کے درمیان معاہدہ ہوا ہے، چین ایران معاہدے پر وزیر خارجہ پارلیمنٹ کو بریفنگ دیں۔

متعلقہ خبریں