جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

ایران اور امریکہ کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کا معاہدہ، چار افراد کو رہا کیا جائے گا

چار افراد کو رہا

تہران : ایران میں قید چار افراد کو معاہدے کے تحت رہا کیا جائے گا، اس کے بدلے میں امریکہ میں قید چار افراد کو رہا کیا جائے گا۔

ایرانی میڈیا رپورٹس کے مطابق تہران اور واشنگٹن نے قیدیوں کے تبادلے کا معاہدہ کیا ہے، اس معاہدے میں ایرانی فنڈز کو بیرون ملک غیر منجمد کرنا بھی شامل ہے۔

ایران میں قید چار افراد کو معاہدے کے تحت رہا کیا جائے گا، جس کے بدلے میں امریکہ میں قید چار افراد کو رہا کیا جائے گا۔

دونوں ممالک کے درمیان بالواسطہ بات چیت کے بعد خطے کے ایک ملک کے مرکزی بینک کو جنوبی کوریا میں موجود ایرانی فنڈز حاصل کرنے کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : ایران : یونیورسٹی پر پولیس کا چھاپہ، طلباء کے ساتھ جھڑپیں، پارلیمنٹ کا بند کمرہ اجلاس

کم از کم دو دیگر امریکی شہری اس وقت ایران میں قید ہیں۔ بزنس مین 57 سالہ عماد شرقی کو گزشتہ سال جاسوسی کے الزام میں 10 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی اور ماہر ماحولیات مراد تہباز، 66، جو کہ برطانوی شہری بھی ہیں، کو 2018 میں گرفتار کیا گیا تھا اور جولائی میں ضمانت پر رہا کیا گیا تھا۔

سرکاری خبر رساں ایجنسی نے رپورٹ کیا تھا کہ دونوں ممالک کے قیدیوں کی رہائی کے لیے ایران اور امریکہ کے درمیان مذاکرات کو حتمی شکل دینے کے ساتھ، ایران کے مسدود وسائل میں سے 7 بلین ڈالر جاری کیے جائیں گے۔

تاہم امریکی محکمہ خارجہ نے ایسے کسی بھی لنک کو صاف جھوٹ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا۔

تہران کا جنوبی کوریا پر الزام ہے کہ اس نے ایرانی فنڈز کے 7 بلین ڈالر کو یرغمال بنا رکھا ہے اور سیول سے بار بار اسے جاری کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں