جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

اسرائیل میں طوفانی بارشوں سے جنگی طیاروں اور فوجی اڈے کو کروڑوں ڈالر کا نقصان

مقبوضہ بیت المقدس : سیلاب نے اسرائیل کے جنگی طیاروں اور فوجی اڈے کو کروڑوں ڈالر کا نقصان پہنچا دیا۔

اسرائیلی فضائی دفاع کے محکمے کو تاریخ کا بدترین نقصان پہنچا ہے۔ اسرائیل نے اعتراف کیا ہے کہ حالیہ طوفانی بارشوں کے باعث 8 ایف 16 جنگی طیاروں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

اسرائیل کے عبرانی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ اسرائیل میں شدید بارشوں اور اس کے نتیجے میں سیلابی ریلے سے تل ابیب کے جنوب میں واقع ایک فوجی اڈے اور اس پر موجود طیاروں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ اسرائیلی ریاست کی تاریخ میں یہ اب تک کا سب سے بڑا نقصان ہے۔

عبرانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق تل ابیب کے جنوب میں واقع ایئربیس پر کھڑے طیاروں کو نقصان پہنچنے کے بعد انہیں وہاں سے ہٹانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

ٹرمپ کے مواخذے کی سینیٹ میں کارروائی کی قرارداد منظور

نشریاتی ادارے کے مطابق سیلابی ریلہ ایئر بیس کے دونوں اطراف سے بہہ نکلا، پانی ہوائی اڈے کے اندر داخل ہوا جس کے باعث جنگی طیاروں اور فوجی اڈے کو کروڑوں ڈالر کانقصان پہنچا ہے۔

رپورٹ کے مطابق پانی کا ریلا ہوائی اڈے کے گودام میں داخل ہوگیا، جس کے نتیجے میں گودام ملبے سے بھر گیا، اس کے علاوہ کئی جنگی طیاروں کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔

فوجی اڈے پر بعض مقامات پر پانی ایک سے ڈیڑھ میٹر پانی کھڑا ہوگیا اور سیلابی پانی کئی کئی طیاروں کے اندر گھس گیا۔ 

متعلقہ خبریں