جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

امید تھی کہ یہ وزیر صاحب ٹیکس فری بجٹ دینگے لیکن اربوں روپے کے ٹیکسز لگادیئے گئے: خورشید شاہ

صاحب ٹیکس فری

اسلام آباد: خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ امید تھی کہ یہ وزیر صاحب ٹیکس فری بجٹ دیں گے، بجٹ میں اربوں روپے کے ٹیکسز لگادیئے گئے۔ ملک ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نہیں نکلا، افسوس ہے۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں خورشید شاہ کا اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میں طویل عرصہ سے اپنے حلقے کے عوام کی نمائندگی نہ کرسکا، میری گرفتاری کے دوران تین وزرائے خزانہ کی تبدیلی ہوئی، بجٹ میں اربوں روپے کے ٹیکسز لگادیئے گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ کسی ملک کی معیشت کا دارومدار اعدادوشمار پر نہیں ہوتا، بجٹ میں دیکھا جانا چاہیئے کہ لوگوں کے پیٹ بھرے ہوئے یا نہیں، امید تھی کہ یہ وزیر صاحب ٹیکس فری بجٹ دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: خورشید شاہ کے پروڈکشن آرڈرز جاری کرنے کا معاملہ اسپیکر قومی اسمبلی کے حوالے

انہوں نے کہا کہ عوام کی خوشحالی ہی بہتر معیشت کی نشانی ہے، یہاں گالیاں دی گئیں مائیں بہنیں سب کی ہوتی ہیں، یہ پارلیمنٹ ہے تو ملک ہے۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ملک ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نہیں نکلا، افسوس ہے، یہ اپوزیشن یا حکومت کا نہیں سب کا معاملہ ہے،

ہیلتھ کارڈ کے معاملے پر ایک بڑا سکینڈل بنے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ سندھ کے صحت کے نظام کو سلام ہے، سندھ میں آپریشن مفت ہو رہے ہیں، ادویات مفت مل رہی ہیں۔ سندھ میں 20 لاکھ والا دل کا آپریشن مفت کیا جاتا ہے، سندھ میں جگر کی بیماری کا علاج مفت کیا جارہا ہے، سندھ میں مریضوں سے یہ نہیں پوچھا جاتا تم کہاں سے آئے ہو۔

انہوں نے کہا کہ جو اقدار میں بیٹھا ہے اس کی ذمہ داری زیادہ ہے، ملک کو ایٹمی پاور بنا رہے ہیں مگر آبادی بڑھ رہی ہے اس پر سوچیں، ہماری زمین کم ہوتی جا رہی ہے اور آبادی زیادہ ہو رہی ہے۔

خورشید شاہ نے کہا کہ غربت انتہا کو پہنچ گئی، غریب کو کچل دیا گیا ہے، عوام کی خوشحالی ہی بہتر معیشت کی نشانی ہے، زراعت کو آپ نے کیا دیا، کیوں زراعت میں اضافہ نہیں ہوتا؟ اور پاکستان زرعی ملک ہے، اس کا حشر یہ ہے۔

متعلقہ خبریں