جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

جب وزیراعظم کا 2 لاکھ میں گزارا نہیں تو عام آدمی کیسے گزارا کرے: شہباز شریف

شہباز

لاہور: شہباز شریف نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں سالانہ اضافہ ختم کرنے کی مخالفت کردی۔

اپنے بیان میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر و قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا کہنا تھا کہ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں سالانہ انکریمنٹ ختم کرنا ظلم کی انتہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب وزیراعظم کا 2 لاکھ میں گزارا نہیں تو سرکاری ملازم چند ہزار میں کیسے گزارا کرے گا۔

شہباز شریف کا کہنا ہے کہ حکومت پورے پاکستان کو سڑکوں پر نکلنے پر مجبور کرچکی ہے اور موجودہ حکومت سرکاری ملازمین سمیت معاشرے کے ہر طبقے کے لیے بری خبر ہے۔

انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین کے خلاف ظالمانہ اقدامات برداشت نہیں کریں گے اور اس موقع پر سرکاری ملازمین اور عوام کو تنہا نہیں چھوڑیں گے، ظالم حکومت کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔

صدر ن لیگ کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کی شرائط قوم کے گلے کا پھندا بن چکی ہیں اور ثابت ہوگیا کہ یہ عوام کی نہیں آئی ایم ایف کی غلام حکومت ہے جب کہ عوام پر ظلم ڈھانے والوں نے کہا تھا کہ خود کشی کرلیں گے لیکن آئی ایم ایف کے پاس نہیں جائیں گے۔

خیال رہے کہ وفاقی حکومت نے مالی سال 21-2020 کے بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہیں کیا جب کہ گزشتہ دنوں ہی ایک خبر سامنے آئی ہے کہ سرکاری ملازمین کی ریٹائرمنٹ کی عمر بھی 55 سال کرنے کی تجویز زیر غور ہے۔

متعلقہ خبریں