جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

جہانگیر ترین اور علی ترین کی ضمانت کی درخواستیں واپس لینے کی بناء پر نمٹا دیں گئیں

ترین کی ضمانت کی

لاہور : سیشن عدالت نے فراڈ، منی لانڈرنگ اور جعلی اکاؤنٹس کے مقدمات میں جہانگیر ترین اور علی ترین کی ضمانت کی درخواستیں واپس لینے کی بناء پر نمٹا دیں۔

جہانگیرترین اور ان کے صاحبزادے علی ترین دو مختلف عدالتوں میں پیش ہوئے۔ ایڈیشنل سیشن جج حامد حسین اور رفاقت علی گوندل نے منی لانڈرنگ اور جعلی اکاؤنٹس سمیت دیگر مقدمات کی سماعت کی۔

اس موقع پر ایف آئی اے نے دونوں عدالتوں میں بیان دیا کہ جہانگیر ترین اور علی ترین کی گرفتاری کی ضرورت نہیں ابھی ریکارڈ کا جائزہ لے رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : جہانگیر ترین کی شوگر ملز کا آڈٹ کرنے کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

جہانگیر ترین کے وکلاء نے کہا کہ تمام ریکارڈ ایف آئی اے کے پاس ہے لہذا گرفتاری بنتی ہی نہیں۔ ملزمان کے وکلاء نے ضمانت کی درخواستیں واپس لینے کی استدعا کی، جس پر عدالت نے درخواستیں نمٹا دیں۔

عدالت نے ہدایت کی کہ کسی بھی تادیبی کارروائی سے سات روز پہلے ایف آئی اے عدالت اور جہانگیر ترین کو آگاہ کرے۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا کہ ان کے مقدمات اور بجٹ کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے۔ جہانگیر ترین کی پیشی کے موقع پر اراکین اسمبلی بھی اظہار یکجہتی کے لیے عدالت پہنچے۔

متعلقہ خبریں