جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

ملکی معیشت کے ساتھ انصاف نہیں کیا گیا: وزیر خرانہ شوکت ترین

شوکت

واشنگٹن: شوکت ترین کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو خراب معیشت ورثے میں ملی ہے، ملکی معیشت کے ساتھ انصاف نہیں کیا گیا۔

وزیرخزانہ شوکت ترین کی واشنگٹن میں امریکی ادارہ برائے امن میں گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ 1960 کی دہائی میں پاکستانی معیشت ایشیا کی چوتھی بڑی معیشت تھی، وقت کے ساتھ ساتھ ہم نے معیشت کی سمت کھودی ہے، ملکی معیشت کے ساتھ انصاف نہیں کیا گیا۔

شوکت ترین کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کو خراب معیشت ورثے میں ملی ہے، معیشت کی سمت درست کرنے کیلئے مشکل فیصلے کرنا پڑے، آئی ایم ایف سے رجوع کرنا پڑا کرنسی کی قدر میں گراوٹ کرنا پڑی، کورونا نے عالمی معیشت کو متاثر کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ہر گھر کے ایک فرد کو ٹیکنیکل ٹریننگ دیں گے : شوکت ترین

ان کا کہنا تھا کہ ہم شرح نمو کو منفی 0.5 سے 4.5 فیصد پر لے کرگئے۔ زراعت، صنعت، درآمدات اور ہاؤسنگ میں اصلاحات کیں، پاکستان گوادر میں عالمی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرتا ہے، زراعت، گھروں کی تعمیر کیلئے سستے قرضے دے رہے ہیں، کمزور طبقے کو صحت کارڈ جاری کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف سے ٹیکنیکل سطح پر مذاکرات مکمل کرلیے ہیں، پاکستان اور بھارت کے درمیان کشمیر ایک بنیادی مسئلہ ہے، مستحق طبقے کو ترقی کے ثمرات پہنچائیں گے۔

متعلقہ خبریں