جی ٹی وی نیٹ ورک
خیبرپختونخواہ

صوابی میں جج کے قتل میں ملوث ملزمان گرفتار

صوابی میں

صوابی میں انسداد دہشت گردی کے جج آفتاب آفریدی اور ان کے خاندان کے 3 افراد کے قتل کیس میں 2 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔

ڈی پی او صوابی محمد شعیب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ مقتول جج جسٹس آفتاب آفریدی کے قاتلوں کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے،

گرفتار ہونے والوں میں عزیز عرف عزیزوسکنہ ڈاک کلے اور داؤد سکنہ ماشو بانڈہ شامل ہیں،

جب کہ ملزمان کے قبضے سے واردات میں استعمال ہونے والی گاڑی بھی برآمد کرلی گئی ہے۔

ضلعی پولیس آفیسر صوابی کے مطابق واقعہ ذاتی دشمنی کا شاخسانہ ہے اور دونوں خاندانوں کی آپس میں 7سال سے دشمنی چلی آرہی ہے۔

پشاور میں خواجہ سراء کو لوٹنے والے دو مسلح ملزمان گرفتار

انہوں نے بتایا کہ باقی ملزمان کی شناخت بھی کرلی گئی ہے تاہم ان کے نام فی الحال پوشیدہ رکھے جارہے ہیں۔

ان کا کہنا تھاکہ ملزمان سے واردات میں استعمال ہونےوالی گاڑی بھی برآمد کرلی گئی ہے، پولیس ٹیمیں اسلام آباد، پشاور اور خیبر میں کام کررہی ہیں۔

خیال رہے کہ اے ٹی سی جج آفتاب آفریدی،ان کی اہلیہ، بہو اور نواسے کو اتوار کے روز فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ 4 اپریل کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں تعینات جج جسٹس آفتاب آفریدی اپنے اہل خانہ کے ہمراہ سوات سے اسلام آباد جارہے تھے،

کہ صوابی کے انبار انٹرچینج نزد دریائے سندھ پل کے قریب نامعلوم ملزمان نے ان کی گاڑی پر فائرنگ کردی،

 

متعلقہ خبریں