جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

کراچی کو چور نے نہیں چوکیدار نے تباہ کیا ہے: مصطفیٰ کمال

کراچی کو چور

کراچی: مصطفیٰ کمال کا کہنا ہے کہ کراچی کو تباہ کررہے ہیں وہ پاکستان کو تباہ کررہے ہیں، ایم کیو ایم نے کراچی والوں کا سودا کردیا۔ کراچی کو چور نے نہیں چوکیدار نے تباہ کیا ہے۔

مصطفی کمال کا لیاقت آباد میں مردم شماری کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جس مردم شماری کے نتائج غلط آئے تھے اس کا آڈٹ کرانا چاہیئے تھا، وزیراعظم کراچی سے 14 نشستیں لے کر وزیراعظم بنے ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس کہتے ہیں کہ کراچی کی آبادی تین کروڑ سے زائد ہے، نادرا کا ڈیٹا بتاتا ہے کہ کراچی میں ڈھائی کروڑ سے زائد شناختی کارڈ جاری ہوئے ہیں۔ اس مردم شماری کا متنازعہ رہنا ضروری ہے۔اگر اس مردم شماری کو درست تسلیم کرلیا گیا تو آئندہ مردم شماری بھی غلط رہیں گی۔

انہوں نے کہا کہ جو لوگ کراچی کو تباہ کررہے ہیں وہ پاکستان کو تباہ کررہے ہیں، تحریک انصاف اس متنازعہ مردم شماری کو درست تسلیم کرنے پر تلی ہوئی ہے۔ ایم کیو ایم اپنی وزارت بچانے کے لئے متنازع مردم شماری پر دستخط کردئیے ہیں، حکومت ایم کیو ایم کی 7 نشستوں پر کھڑی ہے۔ ایم کیو ایم صرف حکومت کو گھور کر دیکھ لے تو مسائل حل ہوسکتے ہیں، لیکن ایم کیو ایم نے کراچی والوں کا سودا کردیا۔

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ کراچی کو چور نے نہیں چوکیدار نے تباہ کیا ہے، چند ماہ قبل تک ایم کیو ایم کا مئیر تھا۔ آج بھی ایم کیو ایم کے وزیر کابینہ میں بیٹھے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاک سرزمین پارٹی کی وجہ سے شہداء قبرستان میں تالے پڑے ہیں، ایم کیو ایم والے کہ دیتے کہ ہم اس مردم شماری کو قبول نہیں کرتے، ایم کیو ایم کے وزراء کابینہ سے اٹھ کر باہر آجاتے تو حکومت کی مجال نہیں تھی کہ وہ مردم شماری کو درست کہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: مردم شماری کو ٹھیک نہیں کیا گیا تو گورنر ہاؤس کا گھیراؤ کریں گے : مصطفیٰ کمال

ان کا کہنا تھا کہ مریم نواز کے شوہر کی گرفتاری پر پوری پیپلزپارٹی حرکت میں آجاتی ہے، وزیر اعلی سندھ پریس کانفرنس کر دیتے ہیں۔ سندھ کی آبادی کم ہونے پر بلاول بھٹو زرداری نے کوئی بیان نہیں دیا، متنازعہ مردم شماری پر بلاول بھٹو زرداری نے آرمی چیف سے رابطہ نہیں کیا۔

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی اس متنازعہ مردم شماری کو درست تسلیم کرتی ہے، بلاول بھٹو زرداری کو معلوم ہے کہ کراچی حیدرآباد کی درست گنتی ہوگئی تو ان کی حکومت خطرے میں پڑ جائے گی۔ کراچی حیدرآباد کی نشستوں سے وزیر اعلی منتخب ہوجائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ آج لیاقت آباد میں مردم شماری کے خلاف دوسری ریلی ہے، اس سے شاہراہ فیصل سے احتجاجی ریلی نکالی۔ ہمیں ایسے پاکستان میں نہیں جینا چاہتے جس میں ہماری درست گنتی نہ کی جائے، حکمران ہمیں مجبور نہ کریں کہ جگہ جگہ مظاہرے کریں۔ ہم نے اس شہر کے امن کی خاطر قربانیاں دی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں شوق نہیں ہے لیکن اپنی نسلوں پر ہونے والا ظلم نہیں دیکھ سکتے، حکومت بہت طاقتور ہوگی لیکن فرعون سے زیادہ طاقتور نہیں ہے۔ آج پاکستان بنانے والے کھڑے ہوگئے ہیں رب کی مدد آئے گی، حکمران اپنا قبلہ درست کرلیں ہم اپنی آخری سانس تک اپنے حق کے لئے کھڑے رہیں گے۔

متعلقہ خبریں