جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

کراچی : کرونا وائرس کے نمونوں میں نئی قسم کے وائرس کی تبدیلیوں کا انکشاف

کرونا وائرس کے نمونوں میںنئی قسم کے وائرس کی تبدیلیاں

وزیراعظم کی کورونا ٹاسک فورس کمیٹی برائے سائنس و ٹیکنالوجی کے چیئرمین ڈاکٹر عطاالرحمٰن نے انکشاف کیا ہے کہ کراچی میں کورونا وائرس کے کچھ نمونوں میں اسپائیک پروٹین سے متعلق تبدیلیاں پائی گئی ہیں۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام کے میزبان سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جامعہ کراچی میں قائم ادارے انٹرنیشنل سینٹر فار کیمیکل اینڈ بائیولوجوکل سائنسز میں وائرس کا جینیاتی تجزیہ کیا گیا جس میں سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ وائرس تبدیل ہورہا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ 48 نمونوں میں 109 نمونوں مینتبدیلیوں کی نشاندہی ہوئی ہے اور ان میں کچھ تبدیلیاں اسپائیک پروٹین سے تعلق رکھتی ہیں۔

ڈاکٹر صاحب نے بتایا کہ برطانیہ میں سامنے آنے والے تبدیل شدہ وائرس سے اموات کی شرح میں اضافہ نہیں ہوا بلکہ اس کے جارحانہ انداز میں تیزی سے پھیلنے کی وجہ سے اموات میں اضافہ ہوا ہے کیوں کہ جتنے زیادہ لوگ اس سے متاثر ہوں گے اس حساب سے مریض کی اموات ہوں گی۔

وائرس کی بدلتی صورتحال اور ویکسین کے مؤثر ہونے کے بارے میں پوچھے گئے سوال پر ڈاکٹر عطاالرحمٰن نے جواب دیا کہ زیادہ توقع اسی بات کی ہے ویکسین وائرس کی تبدیل شدہ ہیت پر بھی اثر انداز ہوگی تاہم حتمی طور پر کچھ کہنا ممکن نہیں ہے۔

کراچی اور سندھ میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز کی شرح زیادہ ہونے کی وجہ انہوں نے دیگر صوبوں کے مقابلے کم احتیاط کرنے کو قرار دیا۔

خیال رہے کہ پاکستان میں اب 4 لاکھ 65 ہزار سے زائد افراد کے وائرس سے متاثر ہونے اور ان میں سے 4 لاکھ 17 ہزار 134 کے صحت مند ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے جبکہ 9 ہزار 668 مریض انتقال کر چکے ہیں۔

متعلقہ خبریں