جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

جامعہ کراچی میں سیکیورٹی اہلکار کا طالب علم پر تشدد کرنے معاملے کی انکوائری کا حکم

طالب علم پر تشدد

کراچی : وزیر جامعات سندھ اسماعیل راہو نے جامعہ کراچی میں سیکیورٹی اہلکار کا طالب علم پر تشدد کرنے معاملے کی انکوائری کا حکم دے دیا ہے۔

وزیر جامعات سندھ اسماعیل راہو نے سیکریٹری یونیورسٹیز اور وی سی جامعہ کراچی سے طالب علم پر تشدد کے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔

انہوں نے کہا کہ چیکنگ کے نام پر کسی پر تشدد کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے۔ دہشتگردی کی تازہ لہر کی وجہ سے ہم غیر معمولی صورتحال سے گزر رہے ہیں۔ نئے حالات میں سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے لیے غیر رواجی اقدامات لازم ہو گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ایم کیو ایم کا کراچی میں لوڈشیڈنگ پر تشویش کا اظہار، وزیراعظم سے نوٹس کا مطالبہ

ان کا کہنا تھا کہ ان اقدامات کو کامیاب بنانے کے لیے یونیورسٹی سے متعلقہ افراد کا ایک دوسرے کے ساتھ تعاون اور اعتماد لازم ہے۔ منتظمین، اساتذہ، طلبہ و طالبات اور ملازمین کے نمائندے مشاورت سے مسائل حل کریں۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ طلبہ ہمارے ملک و قوم کا مستقبل اور سرمایہ ہیں، تعلیم اور تدریس کے ساتھ ان کی حفاظت بھی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

متعلقہ خبریں