جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

کسان اتحاد کی ڈی چوک اور پارلیمنٹ تک جانے کی دھمکی

ڈی چوک اور پارلیمنٹ

اسلام آباد : کسان رہنماؤں کا کہنا ہے کہ ہمارے مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو ہم ڈی چوک اور  پارلیمنٹ کا رخ کریں گے۔

کسان اتحاد کا احتجاجی دھرنا ساتویں روز میں داخل ہوگیا ہے۔ کسان رہنماء کے مطابق گزشتہ رات کسان رہنماؤں کی وفاقی وزیر داخلہ سے ملاقات ہوئی۔ انہوں نے گزشتہ رات ہی وزیراعظم سے مختصر ملاقات کروانے کا کہا لیکن ہم نے آفر مسترد کردی۔

یہ بھی پڑھیں : عوام کے مسائل اہم ہیں عمران خان کا آج کا کیس اہم نہیں تھا: فواد چودھری

انہوں نے کہا کہ وزیر داخلہ نے شرط رکھی کہ وزیراعظم سے ملاقات کے فوراً بعد آپ دھرنا ختم کریں گے۔ نوٹیفکیشن ہونے تک دھرنا ختم نہیں ہوگا۔ آج دن گیارہ بجے وزیراعظم سے ملاقات متوقع ہے۔ اج بھی مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو پلان بی اور پلان سی پر غور کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پلان بی ڈی چوک اور پارلیمنٹ کا رخ کریں گے۔ پلان سی پورے ملک کی میں شاہراہوں کو ٹریفک کے لیے بند کریں گے، احتجاج کا دائرہ ملک بھر میں پھیلایا جائے گا۔

متعلقہ خبریں