جی ٹی وی نیٹ ورک
معیشت

پیٹرولیم مصنوعات کے بعد ایل پی جی بھی مہنگی، گھریلوسلنڈرکی قیمت میں 122 روپے اضافہ

پیٹرولیم مصنوعات

اسلام آباد: پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے ایل پی جی کی قیمت بھی بڑھادیں۔

آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی کی جانب سے ایل پی جی کی قیمت کا نوٹیفیکیشن جاری کردیا گیا ہے جس میں ایل پی جی کی فی ٹن پیداواری قیمت 95283 روپے فی ٹن مقررکی گئی ہے۔

فروری 2021 کے لیے فی کلوگرام ایل پی جی کی قیمت 10 روپے بڑھ کر 158 روپے ہوگئی ہے جبکہ گھریلو سلنڈرکی قیمت 122 روپے بڑھ کر1863 روپے ہوگئی اورکمرشل سلنڈر کی قیمت 471 روپے بڑھکر 7168 روپے ہوگئی ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق ایل پی جی پر مارکیٹنگ اور ڈسٹری بیوشن مارجن 35000 روپے ہوگی جبکہ 4699 روپے فی ٹن ایل پی جی پر پیٹرولیم ڈیولپمنٹ لیوی بھی عائد ہوگی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق فی ٹن ایل پی جی پر 22941 روپے سیلز ٹیکس بھی عائد ہوگا جسکے بعد ایل پی جی صارف قیمت 157894 روپے فی ٹن ہوگی۔

اوگرا کے مطابق گھریلو استعمال کے سلینڈر کی بغیرٹیکس قیمت 1124 روپے ہوگی۔ اور تمام ٹیکسزلیوی اورمارکیٹنگ مارجن شامل کرکے صارفین کو گھریلو استعمال کے سلینڈر کی فروخت کی جائے گی۔

پیٹرول کی قیمت میں 2 روپے 70 پیسے اضافہ

ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرزایسوسی ایشن آف پاکستان کے چئیرمین عرفان کھوکھر نے ایکسپریس کو بتایا کہ رواں سال ملک میں 735460 میٹرک ٹن ایل پی جی کی پیداوارہوئی ہے

جبکہ تقریبا 473900 ٹن سمندر کے راستے اور 660000 ٹن ایل پی جی زمینی راستے ایل پی جی درآمد کی گئی ہے۔

انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ایل پی جی کو کم آمدنی کے حامل طبقے کی دسترس میں لانے کے لیے فوری طور پر ایل پی جی پرعائد پیٹرولئیم ڈیولپمنٹ لیوی ختم کرنے کا اعلان کرے تاکہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے اور قدرتی گیس میں کمی کے موجودہ بحران میں ایل پی جی غریب طبقے کے لیے سستا متبادل ایندھن ثابت ہوسکے۔

متعلقہ خبریں