جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

مقبوضہ کشمیر: بھارتی فوج کی جارحیت کے دوران مزید تین کشمیری شہید، تعداد 217 ہوگئی

کشمیر

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جارحیت کے دوران مزید تین کشمیری شہید ہو گئے، ایک سالہ محاصرے کے دوران بھارتی فوجیوں نے دو سو سترہ مظلوم کشمیریوں کو شہید کردیا۔

مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کی جانب سے گذشتہ سال پانچ اگست کو مسلط کردہ لاک ڈاون کو ایک سال مکمل ہو رہا ہے۔ اس دوران بھارتی فوجیوں نے دو سو ترہ کشمیریوں کو شہید کیا جن میں چار خواتین اور دس بچے بھی شامل ہیں۔

پرامن مظاہرین پر بھارتی فوج کی جانب سے طاقت کے استعمال کی وجہ سے ایک ہزار افراد شدید زخمی ہوئے۔

ایک سال قبل نئی دہلی نے آرٹیکل تین سو ستر کو منسوخ کرتے ہوئے مقبوضہ جموں و کشمیر کے علیحدگی پسند گروپوں کو عملی طور پر کچلنے کی حکمت عملی اپنائی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: بھارتی فوج نے نہاد سرچ آپریشن کے نام پر دو مظلوم کشمیریوں کو شہید کردیا

رواں سال سرکاری فوج کی کارروائیوں میں حزب المجاہدین کے متعدد اعلی کمانڈر شہید ہوئے ہیں۔ ایک سال کے عرصے میں مقبوضہ کشمیر کو کھلی جیل میں تبدیل کردیا گیا ہے۔

ہزاروں حریت رہنماوں، سیاسی اور انسانی حقوق کے کارکنوں، مذہبی سربراہوں، صحافیوں، تاجروں اور کارکنوں کو پانچ اگست 2019 کے بعد گرفتار کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

ہزاروں کشمیری تہاڑ ، ہندوستان اور مقبوضہ کشمیر کی دیگر جیلوں میں بند ہیں، جن میں محمد یاسین ملک، شبیراحمد شاہ، محمد اشرف صحرائی شامل ہیں، جبکہ سینئرحریت رہنما سید علی گیلانی اور میر واعظ عمر فاروق سری نگر میں نظربند ہیں۔

متعلقہ خبریں