جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

مقبوضہ کشمیر: کرفیو اور لاک ڈاؤں کو 174 واں روز، بھارتی فوج کا وحشیانہ تشدد جاری

مقبوضہ کشمیر

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤں کو 174 روز گزر گئے، وادی میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر امریکا کی ریسرچ سروس تھنک ٹینک نے بھی اپنی رپورٹ میں بھارتی اقدامات کا پردہ فاش کردیا۔

مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن کو 174 روز گزر گئے، بھارت کی جانب سے شہریوں کے تمام بنیادی حقوق سلب کئے جانے کے باوجود کشمیریوں کی سول نافرمانی کی تحریک بدستور جاری ہے۔

ہندوستانی حکومت نے کشمیری عوام کو یرغمال بنا رکھا ہے۔ پوری ریاست کو اقتصادی طور پر مفلوج کردیا ہے، وادی کشمیر کے لاکھوں لوگ دنیا سے کٹ کر رہ گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: مقبوضہ کشمیر: کرفیو کو 172 روز گزر گئے، بھارتی فوج نے 3 نوجوانوں کو زندہ جلادیا

قابض بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں وحشیانہ تشدد کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے، بھارتی فوجیوں نے وادی کے نو اور جموں کے پانچ اضلاع میں تلاشیاں لیتے ہوئے لوگوں کو ہراساں کیا۔

امریکا کے کانگریشنل ریسرچ سروس تھنک ٹینک نے ایک رپورٹ جاری کی ہے جس میں تنازع کشمیر کا پس منظر دوہزار انیس کے اہم واقعات کا جائزہ اور کشمیر کے بارے میں امریکی پولیسی کا خلاصہ بیان کیا گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جموں کشمیر کے خصوصی درجے کو منسوخ کئے جانے کے بعد بھارتی اقدام نے عالمی غم و غصے کو جنم دیا، کشمیر کی حیثیت میں تبدیلی سے علاقائی استحکام کو نقصان بھی پہنچا ہے۔

حکومت پاکستان نے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لیے 25 جنوری سے مہم شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ 25 جنوری سے مسئلہ کشمیر سے متعلق مہم شروع کی جائے گی، جس کے دوران مسئلہ کشمیر کو میڈیا، اندرونِ ملک سمیت دنیا بھر میں اجاگر کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں