جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

مقبوضہ کشمیر: کرفیو اور لاک ڈاؤن 277 ویں روز میں داخل

کرفیو اور لاک ڈاؤن

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن دو سو ستتر ویں روز میں داخل ہوگیا۔ کشمیری عالمی برادری سے مدد کے طلب گار ہیں، بھارتی انتظامیہ غیر انسانی کرفیو ہٹانے کے لیے تیار نہیں ہیں۔

مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن سے حالات خراب سے خراب تر ہوتے جارہے ہیں، کرفیو آٹھ مہینے پورے ہونے کی جانب بڑھ رہا ہے۔

بھارت کے شہر حیدرآباد میں کشمیری نوجوان اسرار بشیر کو قتل کردیا گیا، اسرار کی لاش مقبوضہ کشمیر کے علاقے آچاہی پورہ لائی گئی۔

نمازجنازہ میں پورے ڈسٹرکٹ اسلام آباد کے کشمیریوں نے شرکت کی، نمازجنازہ کے بعد بڑا مظاہرہ کیا گیا جس میں ہزاروں کشمیریوں نے بھارت کے خلاف نعرے بازی کی۔

یہ بھی پڑھیں: کورونا وائرس : آزاد کشمیر میں ہیلتھ ایمرجنسی لگانے کا فیصلہ

ڈسٹرکٹ بارہ مولاسے مقامی تاجر کو حراست میں لے کر نا معلوم مقام پرمنتقل کردیا گیا۔

مقبوضہ کشمیرکی حکومت نے نیشنل کانفرنس کے صدر و سابق وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ کو سات ماہ بعد رہا کردیا۔

رہائی کے بعد اپنے گھر کے باہر میڈیا سے گفتگو میں فاروق عبداللہ کا کہنا تھا کہ ان کی آزادی تب تک نامکمل ہے جب تک دیگرسیاسی رہنماؤں کو رہا نہیں کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں