مقبوضہ کشمیر: کرفیو اور لاک ڈاؤن اٹھانوے روز میں داخل، 2 نوجوان شہید

مقبوضہ کشمیر اٹھانوے روز

سری نگر : مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن اٹھانوے روز میں داخل ہوگیا ہے۔ وادی میں نام نہاد سرچ آپریشن اور پکڑ دھکڑ کا سلسلہ جاری ہے۔ قابض فوجیوں نے 2 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی فورسز نے بانڈی پورہ میں 2 کشمیری نوجوانوں کو فائرنگ کرکے شہید کردیا۔ بھارتی فورسز نے نوجوانوں کو جعلی سرچ آپریشن اور محاصرے کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔

مودی سرکار کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبانے میں ناکام ہوگئی ہے۔ کشمیری کرفیو توڑ کر سڑکوں پر نکل آئے اور بھارت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

یہ بھی پڑھیں : بھارت کو امن چاہیے تو کشمیر پر اپنی پالیسی تبدیل کرے : شاہ محمود قریشی

گزشتہ روزعید میلاالنبی کے موقع پر درگاہ حضرت بل کو بند کردیا گیا اورعید میلادالنبی کا جشن منانے نہیں دیا گیا۔

مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اور لاک ڈاؤن اٹھانوے روز میں داخل ہوگیا۔ دکانیں، کاروبار اور تعلیمی مراکز بند ہیں۔ لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔ وادی میں نام نہاد سرچ آپریشن اور پکڑ دھکڑ کا سلسلہ جاری ہے۔ ہرلمحہ زندگی سسک رہی ہے۔

قابض بھارتی فوج نے کشمیریوں کی زندگی اجیرن بنادی ہے۔ حالات تاحال کشیدہ ہیں اور وادی کا دنیا سے تعلق تاحال منقطع ہے۔ خوراک اور ادویہ کی قلت بھی برقرار ہے۔

وادی میں موبائل فون، انٹرنیٹ سروس بند اور ٹی وی نشریات معطل ہیں۔ مودی سرکار کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دبانے میں ناکام ہے، کشمیری کرفیو توڑ کر سڑکوں پر نکل آئے اور بھارت کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔

گزشتہ روزعید میلاالنبی کے موقع پر تاریخ میں پہلی مرتبہ درگاہ حضرت بل کو بھی بند کردیا گیا، جس سے کشمیری عوام میں شدیدغصہ دیکھنے میں آیا۔