جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

آئی ایم ایف کی سخت شرائط، ٹیکس شارٹ فال پورا کرنے کیلئے منی بجٹ کی تیاریاں

آئی ایم ایف

اسلام آباد: آئی ایم ایف کی سخت شرائط پر ٹیکس شارٹ فال پورا کرنے کیلئے حکومت نے منی بجٹ کی تیاریاں شروع کردی ہیں۔

ذرائع کے مطابق منی بجٹ کا مسودہ حتمی مراحل میں داخل ہوگیا ہے، آئی ایم ایف جائزہ مشن کی آمد سے قبل زیادہ تر شرائط پوری کردی جائینگی، متعدد لگژری اشیاء پر اضافی ڈیوٹی عائد کرنے کی تجویز دی گئی ہے، 70 ارب کے لگ بھگ اشیا پر ٹیکس کی چھوٹ ختم کرنے اور نان فائلرز کی بینکنگ ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس عائد کرنے کی تجویزدی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: آئی ایم ایف وفد رواں ماہ ہی دورہ پاکستان متوقع، برف پگھلنے کا امکان

ذرائع نے بتایا کہ ریونیو اقدامات سے متعلق تجاویز وزارت خزانہ کے ساتھ شیئر کردی گئی ہیں، یومیہ 50 ہزار روپے سے زیادہ کی بینک ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس عائد کرنے کی تجویز دی گئی ہے، ایکٹیو ٹیکس پیئرز لسٹ میں شامل افراد پر مجوزہ ٹیکس لاگو نہیں ہوگا، نان فائلرز پر ٹیکس عائد کرنے سے 45 سے 50 ارب آمدن کا تخمینہ آئے گا، پٹرولیم مصنوعات پر لیوی 50 فیصد تک بڑھانے کا امکان ہے، گیس کے نرخ میں 30 فیصد تک اضافے کا امکان، جبکہ مختلف صارفین کے لیے بجلی کے نرخ 25 فیصد تک بڑھنے کا امکان ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ تمام اقدامات کا آغاز یکم فروری سے ہوسکتا ہے۔

متعلقہ خبریں