جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

لاپتہ افراد کی بازیابی کیس : اگر پیش رفت نہ ہوئی تو بڑوں کو بلائیں گے : سندھ ہائی کورٹ برہم

پیش رفت نہ ہوئی تو بڑوں کو

کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے کہا ہے کہ افسانوں پر مبنی رپورٹس سے کام نہیں چلے گا، اگر پیش رفت نہ ہوئی تو بڑوں کو بلائیں گے۔

سندھ ہائی کورٹ میں لاپتہ افراد کی بازیابی سے متعلق درخواستوں کی سماعت ہوئی۔ وزارت داخلہ فوکل پرسن و دیگر حکام عدالت میں پیش ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں : پی آئی اے کے ایئر ہوسٹس کینیڈا میں لاپتہ ہوگئے

لاپتہ افراد بازیاب نہ کرانے پر عدالت سخت برہم ہوگئی۔ جسٹس نعمت اللہ پھلپوٹو نے ریمارکس دیئے کہ دس دس جے آئی ٹیز ہوچکیں، کوئی نتیجہ کیوں نہیں نکلتا؟ بس ایک فوٹو کاپی نکال کر سجھتے ہیں کہ کام ہوگیا؟

عدالت نے کاہ کہ افسانوں پر مبنی رپورٹس پیش کردی جاتی ہیں۔ ایسی رپورٹس سے کام نہیں چلے گا۔ اگر پیش رفت نہ ہوئی تو بڑوں کو بلائیں گے۔ ہمیں لاپتہ افراد کی بازیاب کیسز میں پیش رفت چاہیے۔ ہر کیس کو علیحدہ علیحدہ دیکھیں اور رپورٹ پیش کریں۔

عدالت نے کیس کی مزید سماعت 18 مارچ تک ملتوی کردی۔

متعلقہ خبریں