جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

شریف فیملی نے 12 ملازمین کے نام پر 15 ارب سے زائد کی منی لانڈرنگ کی : شہزاد اکبر

12 ملازمین کے نام

لاہور : شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ 7 ارب کے اثاثوں سے متعلق ریفرنس دائر ہوچکا ہے، 12 ملازمین کے نام پر 15 ارب سے زائد کی منی لانڈرنگ کی گئی۔

وزیر اعظم کے مشیر برائے احتساب و داخلہ مرزا شہزاد اکبر نے پریس کانفرنس میں کہا کہ شہباز شریف جو 10 سال پاکستان کہ نام نہاد خادم اعلیٰ رہے۔ 7 ارب سے زیادہ منی لانڈرنگ کر کے اب نیب کی جسمانی حراست میں ہیں۔ تحقیقات سے ہٹ کر کچھ چیزیں سامنے آئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف آج بھی یہی بات کریں گے کہ یہ پریس کانفرنس کر کہ الزامات لگاتے ہیں۔ ان کا طریقہ واردات کرپشن کا پیسا وصول کرکے کاروباری اکاؤنٹس میں سے گھوما کر وائٹ کرنا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ شہزاد اکبر نے کہا کہ 7 ارب کے اثاثوں سے متعلق ریفرنس دائر ہوچکا ہے۔ تفتیش شروع ہونے پر کئی چیزیں سامنے آتی ہیں۔ شہباز شریف اور ان کے حواریوں کے پاس کوئی جواب نہیں۔ آج بھی قوم کو گمراہ کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔ یہ کاروبار کے بھیس میں کرپشن کرتے تھے۔ ہمارے پاس واضح ثبوت موجود ہیں۔

مشیر احتساب نے کہا کہ عدالت میں شہباز شریف چین کے حبیب جالب نظر آتے ہیں۔ کرتوت آپ کے پکڑے جارہے ہیں، بھیس بدلنے کے الزام مجھ پر لگارہے ہیں۔ شہباز شریف نے ٹوائلٹ کے نل سے کیمرے ڈھونڈنے کی کوشش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ 12 ملازمین کے نام  پر 15 ارب سے زائد کی منی لانڈرنگ کی گئی۔ ڈبل جعلی کمپنیاں بنائی گئیں۔ ملک مقصود سلمان شہباز کاٹی بوائے تھا۔ ملک مقصود کے اکاؤنٹ میں پیسے ٹرانسفر کرائے گئے۔ مقصود نامی چپڑاسی کے اکاؤنٹ سے 3.7 ارب کی منی لانڈرنگ ہوئی۔ ٹی ٹی کیس کی تحقیقات کے دوران ملک مقصود فرار ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیں : شہباز شریف کی بیٹی رابعہ عمران کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز

ان کا کہنا تھا کہ ملازمین اور بے نامی لوگوں کے نام پر جعلی کمپنیاں بنائی گئیں۔ چپڑاسی گلزار احمد کے نام پر 425 ملین روپے جمع کرائے گئے۔ گلزار احمد خان کے انتقال کے بعد بھی اکاؤنٹ آپریٹ ہوتا رہا۔ مسرور انور ان کا بڑا بااعتماد کیش بوائے تھا۔ ان سب کو سلمان شہباز آپریٹ کرتا تھا۔

یہ کوئی کاروبار یا چینی کے پیسے نہیں تھے۔ الفخری ٹریڈرز کمپنی چنیوٹ میں ایک فرنیچر والے کی ہے۔ فرنیچر والے کو پتہ بھی نہیں کہ اس کی ایک کمپنی بھی ہے۔ وارث ٹریڈرز کے نام پر ایک سال میں 1.32 ارب جمع کرائے گئے۔ وارث ٹریڈر کا مالک رمضان شوگر ملز کا چپڑاسی محمد وارث ہےْ

ایک شخص نے تسلیم کیا اس نے شہباز شریف کے آفس جاکر انہیں چیک دیا۔ راشد ٹریڈرز کا پروپرائٹرز راشد بشیر کو ظاہر کیا گیا۔ راشد ٹریڈرز کے مالک کا ایڈریس بھی ان کے اپنے دفتر کا ہی نکلا۔

شہباز شریف نیب عدالت جا کر ڈرامہ کرتے ہیں۔ ابھی تو شہباز شریف کے کاروبار کا دروازہ کھلا ہے۔ بھتیجی نے آپ سے جماعت ہتھیالی ہے۔

متعلقہ خبریں