جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

موٹر وے زیادتی کیس میں نیا موڑ، ملزم خود تھانے میں پیش ہوگیا

زیادتی

لاہور: موٹروے پر خاتون سے اجتماعی زیادتی کے کیس میں اہم موڑ آیا ہے، مرکزی ملزم عابد کے ساتھی وقارالحسن نے ازخود سی آئی اے ماڈل ٹاؤن میں گرفتاری دے دی۔

لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر گجرپورہ کے قریب خاتون سے زیادتی کے کیس میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔

لاہور کے تھانہ سی آئی اے ماڈل ٹاون میں ملزم وقار الحسن نے بیان دیا ہے کہ اس کا موٹروے زیادتی کیس سے کوئی تعلق نہیں ہے، ان کے نام پر جاری سم کارڈ ان کا سالہ استعمال کرتا ہے۔

ملزم وقارالحسن نے کہا کہ وہ ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کو بھی تیار ہیں۔

کیس میں ایک اور شخص عباس کا نام سامنے آ رہا ہے جس کی تلاش پولیس نے شروع کر دی ہے جو کہ وقار کا رشتہ دار بتایا جارہا ہے۔

پولیس کے مطابق عباس مبینہ طور پر موٹروے زیادتی کیس میں ملوث ہے جس کو جلد پیش کرنے کا امکان ہے۔

وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا ملزم وقارالحسن اور عابد علی کی تصاویر سرکاری طور پر جاری کی گئی تھیں، دونوں کے فون کا جیو فینسنگ کے ذریعے ڈیٹا لیا گیا تھا، صرف خون کے نمونوں پر اکتفا نہیں کر رہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعلی پنجاب عثمان کیس پر لمحہ بہ لمحہ نظر رکھے ہوئے ہیں۔

متعلقہ خبریں