جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

موجودہ حکومت اس لیئے حرام ہے، کیونکہ اس میں مولانا موجود نہیں؟ فردوس عاشق

اسلام آباد: فردوس عاشق اعوان نے مولانا فضل الرحمٰن کو کے آزادی مارچ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سوال اٹھایا کہ مولانا صاحب! آج کس منہ سے پارلیمان کو گرانے کے دعوے فرما رہے ہیں؟ آج آپ کے جمہوریت کے لئے اصول کہاں ہیں؟

وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے سماجی میڈیا ٹوئٹر پر مولانا فضل الرحمن اور ان کے آزادی مارچ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

فردوس عاشق نے کہا کہ مولانا صاحب! موجودہ حکومت اور پارلیمان اس لیے ناجائز اور حرام ہے کیونکہ اس میں آپ موجود نہیں؟ آج آپ کی جمہوریت پسندی کہاں ہے؟ آج کس منہ سے پارلیمان کو گرانے کے دعوے فرما رہے ہیں؟ آج آپ کے جمہوریت کے لئے اصول کہاں ہیں؟

انہوں نے مشورہ دیا کہ مولانا صاحب! دوسروں کو مشورہ دینے کی بجائے اپنے بیٹے سے کہیں کہ استعفیٰ دے دیں۔ انہوں نے سوال اٹھایا کہ اپنے فرزند کے لیے پارلیمان بھی حلال؟ اس کی تنخواہ بھی حلال؟ مراعات بھی حلال؟ اس کی نشست بھی حلال؟

معاون خصوصی نے کہا کہ مولانا صاحب کو کشمیر سے زیادہ کشمیر کمیٹی سے دلچسپی ہے۔ منسٹر کالونی کے گھر کیلئے اسلام آباد کو لاک ڈاؤن نہ کریں۔ مولانا صاحب مارچ کشمیریوں کی آزادی کے لئے کریں، چوروں کی آزادی کے لیے نہیں؟

متعلقہ خبریں