جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

معمر قذافی کے بیٹا سیف الاسلام سیف صدارتی انتخاب کیلئے نااہل قرار

سیف الاسلام سیف

تری پولی : معمر قذافی کے بیٹے سیف الاسلام سیف کو صدارتی انتخاب کی دوڑ سے باہر کردیا گیا، نااہلی کے باعث الیکشن میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

ملٹری پراسیکیوٹر نے الیکشن کمیشن میں مؤقف اپنایا کہ سیف الاسلام سیف کو 2015 میں جنگی جرائم پر موت کی سزا سنائی گئی، سیف الاسلام کا نام صدارتی انتخابات سے خارج کیا جائے۔

الیکشن کمیشن نے صدارتی انتخاب کے لیے معمر قذافی کے بیٹے سیف الاسلام قذافی کے کاغذات نامزدگی مسترد کرنے کا اعلان کردیا ہے، خلیفہ ہفتر سمیت 73 امیدواروں کے کاغذات نامزدگی درست قرار پائے۔

لیبیا میں انتخابی قوانین میں اختلافات ختم کرنے کے لیئے اصلاحات کرنے کے بجائے ان ہی متنازعہ قوانین پر صدارتی انتخابات کا انعقاد کیا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : الیکشن کمیشن کے اختیارات محدود کرنا کسی صورت قبول نہیں: مولانا فضل الرحمان

خیال رہے کہ سیف الاسلام پر معمر قذافی کی حکومت کا تختہ الٹنے کیلئے ہونے والے مظاہروں کو کچلنے کا الزام ہے۔

لیبیا میں صدارتی اور پارلیمانی انتخابات، انتخابی قانون کے بارے میں پائے جانے والے اختلافات کے باوجود 24 دسمبر 2021 کو منعقد ہوں گے۔

خیال رہے کہ لیبیا کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی مندوب جان کیوبس نے جنگ زدہ ملک میں اہم انتخابات سے قبل استعفیٰ دے دیا ہے، جس کی تصدیق انتونیو گوتریس کے ترجمان نے بھی کردی ہے اور انہوں نے اس فیصلے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

اقوام متحدہ نے امید لگائی ہے کہ کیوبس سلامتی کونسل کو لیبیا کی صورت حال پر بریفنگ دینے سے قبل فوری طور پر اپنا عہدہ نہیں چھوڑیں گے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ لیبیا میں موجود دیگر اراکین اپنا کام جاری رکھے ہوئے ہیں، جبکہ اس خالی ہونے والے عہدے کے لیئے کام کر رہے ہیں۔

انہو ں نے کہاکہ استعفیٰ سے قبل جان کیوبس اور سیکرٹری جنرل کے درمیان کوئی اختلاف نہیں تھا۔واضح رہےکہ خصوصی مندوب کا یہ عہدہ سلامتی کونسل کی ستمبر 2020 کی قرارداد 2542 کے ذریعے تشکیل دیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں