جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

مشکل معاشی فیصلے کریں گے اور ٹیکس اکٹھا کریں گے: وزارت خزانہ

وزارت خزانہ

اسلام آباد: وزارت خزانہ نے کہا ہے کہ رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں پانچ اعشاریہ پانچ ارب ڈالر قرض لیا گیا اور گزشتہ سال سات اعشاریہ چار ارب ڈالرغیر ملکی قرض واپس کیا گیا۔

ترجمان وزارت خزانہ کے مطابق جولائی تا دسمبر تین اعشاریہ آٹھ ارب ڈالر غیر ملکی قرضہ واپس کیا، مالی سال 2019 میں مجموعی طور پر سات ارب چالیس کروڑ ڈالر کا یورو بانڈ اور کمرشل قرضہ واپس کیا گیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں ساڑھے پانچ ارب ڈالرقرض لیا گیا، جس سے غیر ملکی قرضے میں ایک ارب ستر کروڑ ڈالر کا اضافہ ہوا، یہ قرضہ کثیر مدات میں حاصل کیا گیا، 2019 کی پہلی ششماہی میں 2018 کی نسبت 31 فیصد زیادہ قرض لیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: وزارت خزانہ نے معاشی رپورٹ جاری کردی، بہترین کارکردگی کا دعویٰ

مالی سال 2018-19 کے دوران غیر ملکی قرضوں کا حجم ساڑھے دس ارب ڈالر تھا، سات ارب چالیس کروڑ ڈالر قرضہ واپس کیا جس سے بیرونی قرضے میں تین ارب دس کروڑ ڈالرکا اضافہ ہوا۔

عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف نے پاکستان کو تین برس کے دوران چھ ارب ڈالر کا قرض دینے کی منظوری دے رکھی ہے، اس سلسلے میں حکومتی ترجمان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف پروگرام پرمکمل عمل درآمد کرکے پاکستانی معیشت کو پائیدار بنیاد فراہم کی جائےگی، مشکل معاشی فیصلے کریں گے اور ٹیکس اکٹھا کریں گے۔

متعلقہ خبریں