نواز شریف اگلے ہفتے میں بیرون ملک روانہ ہوں گے

نواز شریف بیرون ملک روانہ

لاہور : والدہ کی ضد پر نواز شریف نے بیرون ملک علاج پر رضا مند ہوئے، اگلے ہفتے میں بیرون ملک روانہ ہوں گے۔

خاندانی ذرائع کے مطابق سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اگلے ہفتے میں بیرون ملک روانہ ہوں گے۔ نوازشریف کو علاج کے لئے باہر بھجوانے پر ان کی والدہ نے رضا مند کیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ میاں نوازشریف باہر جانے پر رضا مند نہ تھے مگر والدہ کی ضد نے انہیں مجبور کیا۔ والدہ نے اصرار کیا کہ میرے لئے سب سے قیمتی میرا بیٹا ہے، اسے کھونا نہیں چاہتی، آپ علاج کے لئے باہر ضرور جائیں۔

ایک دو روز میں میاں نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکل جائے گا اور وہ اگلے ہفتے میں بیرون ملک روانہ ہو جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں : حکومت کا نواز شریف کا نام ای سی ایل سے ہٹانے کا فیصلہ

واضح رہے کہ ذرائع وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست وزارت داخلہ کو موصول ہوگئی ہے۔

درخواست نواز شریف کی فیملی کی جانب سے دی گئی، شریف فیملی کی درخواست سیکریٹری داخلہ کو موصول ہوئی۔

ذرائع وزارت داخلہ کے مطابق درخواست بیماری اور بیرون ملک علاج کرانے کی بنیاد پر دی گئی، درخواست میں کہا گیا ہے کہ نوازشریف بیرون ملک علاج کے لئے جانا چاہتے ہیں۔

دوسری طرف حکومت نے نوازشریف کا نام ای سی ایل سے ہٹانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ فیصلے کی باضابطہ ہدایات کا وزارتِ داخلہ میں انتظار کیا جا رہا ہے، جس کے بعد نوازشریف کا نام آئندہ 48 گھنٹوں میں ای سی ایل سے ہٹائے جانے کا امکان ہے۔

نوازشریف کا نام وفاقی حکومت کی واضح ہدایت کے بعد ای سی ایل سے ہٹایا جائے گا۔ جس کے لیے نیب سے مشاورت کا بھی امکان ہے۔