نہ ڈیل ہے نہ ڈھیل، نواز شریف وطن واپس ضرور آئیں گے : وزیر داخلہ

وزیر داخلہ وطن واپس

اسلام آباد : وزیر داخلہ نے کہا ہے کہ نواز شریف کے والد، بیوی اور بھائی کی قبریں پاکستان میں ہیں وہ پاکستان نہیں چھوڑ سکتے ہیں، وطن واپس ضرور آئیں گے۔ مولانا کو اتنا پیار دے رہے ہیں، وہ وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ بھول جائیں گے۔ ‏

وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے کہا ہے کہ ‏نواز شریف کے ساتھ ڈیل کی جا رہی ہے نہ کہ ڈھیل دی جارہی ہے۔ تمام وزراء کی یہی رائے ہے کہ نواز شریف کو علاج کے لئے بیرون ملک جانا چاہیے۔ مریم نواز بیمار ہو جائیں گی تو انہیں بھی باہر جانے کی اجازت مل جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں : ہر گزرتے دن کے ساتھ نواز شریف کی صحت بگڑ رہی ہے : مریم اورنگزیب

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو صرف علاج کے لئے باہر جانے کی اجازت دی جارہی ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق نواز شریف کی حالت تشویشناک ہے۔ نواز شریف مستقل طور پر تو بیرون ملک نہیں جارہے، علاج کے لئے جارہے ہیں، وطن واپس ضرور آئیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ‏نواز شریف کے والد، بیوی اور بھائی کی قبریں پاکستان میں ہیں وہ پاکستان نہیں چھوڑ سکتے ہیں، ڈاکٹروں نے کہا ہے کہ پاکستان میں نواز شریف کا علاج ممکن نہیں ہے۔

‏وزیر داخلہ نے کہا کہ ہم نے مولانا کو پانی، بجلی اور میڈیکل سپورٹ دی ہے۔ ‏ہم مولانا فضل الرحمان کو اتنا اچھا ٹریٹ کر رہے ہیں کہ ان کا دل لگ جائے گا اور اتنا پیار دے رہے ہیں، وہ وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ بھول جائیں گے۔ ‏مولانا فضل الرحمان جلد جانے والے نہیں۔ ‏ہم مولانا فضل الرحمان کو بٹھائے رکھیں گے۔

اعجاز شاہ نے کہا کہ مہنگائی ہے اس میں کوئی شک نہیں، ‏عمران خان کی ترجیح ہے گورننس بہتر ہو اور انصاف ملے۔ ‏گورننس بہتر ہوگی تو لوگ کمیشن اور حرام کا مال نہیں کھائیں گے۔ حکومت یہ 5 سال اور اگلے 5 سال بھی پورے کرے گی۔

‏انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور زرداری کے 5، 5 سال کے ادوار سیاہ ترین تھے۔