جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

افغانستان میں امن کی جتنی کوشش پاکستان کررہا ہے کوئی اور ملک نہیں کررہا : وزیر اعظم

افغانستان میں امن کی

اسلام آباد : وزیر اعظم نے کہا ہے کہ افغانستان میں امن کی جتنی کوشش پاکستان کررہا ہے کوئی اور ملک نہیں کررہا۔

پاک افغان تجارت و سرمایہ کاری فورم 2020 کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ افغانستان ہمیشہ خطے کیلئے اہم مرکز رہا ہے۔ گزشتہ 40 برس سے افغانستان شدید انتشار کا شکار ہے۔ افغان انتشار کا سب سے بڑا نقصان پاکستان کو ہوا۔

انہوں نے کہا کہ پاک افغان تعلقات کی تاریخ قدیم ہے۔ افغانستان کی تاریخ ہے کہ وہ بیرونی مداخلت برداشت نہیں کرتے۔ افغان عوام اپنے فیصلے خود کرنا پسند کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : پاک افغان تجارت میں حائل رکاوٹوں کو دور کرکے معاشی سرگرمیوں کو فروغ دیا جاسکتا ہے : اسد قیصر

ان کا کہنا تھا کہ بھارت کو تعلقات کی بہتری کی کئی بار پیشکش کی۔ بھارت میں اس وقت مسلمانوں سے شدید نفرت کرنے والی حکومت ہے۔ بھارت کی تاریخ میں اتنی مسلمان مخالف حکومت کبھی نہیں آئی۔ بھارت نے کشمیر میں 80 لاکھ افراد کو محصور کیا ہوا ہے۔ بھارت پاکستان میں انتشار پھیلانا چاہتا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان کو صنعتی ملک بنانا چاہتے ہیں۔ تجارت کا فروغ ہماری اولین ترجیح ہے۔ افغانستان میں امن کا براہ راست فائدہ پاکستان کو ہوگا۔ افغانستان میں امن کی جتنی کوشش پاکستان کررہا ہے کوئی اور ملک نہیں کررہا۔ جب سے حکومت بنائی ہے، طالبان مذاکرت کی کامیابی کی خواہش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں افغانستان کے ساتھ پاکستان نے بھی نقصان اٹھایا۔ تجارت کے ذریعے خطے میں خوشحالی آئے گی۔ وقت آگیا کہ احساس کریں کیا کھویا اور کیا پایا۔

متعلقہ خبریں