جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

چینی بحران پر پیپلز پارٹی کی قیادت کو پھنسانے کی کوشش کی گئی : مرتضیٰ وہاب

قیادت

کراچی : مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی کہ پیپلز پارٹی کی حکومت اور قیادت چینی اسکینڈل میں ملوث ہے۔

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے پریس کانفرنس میں کہا کہ پاکستان میں چینی کے بحران کی بنیادی وجہ برآمد ہے۔ وزارت تجارت نے ایک ملین ٹن چینی کی برآمد کی سفارش کی۔ وفاقی کابینہ نے ای سی سی کی سفارش پر چینی ایکسپورٹ کی اجازت دی۔ چینی برآمد کا فیصلہ 3 دسمبر کی درخواست پر 4 دسمبر کو ہوا۔ محض 48 گھنٹے میں تمام تر کارروائی مکمل کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی کہ پیپلز پارٹی کی حکومت اور قیادت چینی اسکینڈل میں ملوث ہے۔ چینی اسکینڈل سے متعلق وفاقی حکومت سے کچھ سوالات پوچھے اب تک جواب نہیں ملا۔

یہ بھی پڑھیں : کمیشن نے حقائق نہیں بتائے، چینی بحران کے ذمے دار وزیر اعظم عمران خان ہیں : شاہد خاقان عباسی

ان کا کہنا تھا کہ شہزاد اکبر نے کہا کہ وزیراعظم نے سبسڈی نہیں دی صرف ایکسپورٹ کی اجازت دی۔ شہزاد اکبر نے اپنی پریس کانفرنس میں سندھ حکومت کے کسی سوال کا جواب نہیں دیا۔

مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ یہ کہتے ہیں کہ ماضی کی حکومتوں سے سبسڈی کا حساب لیں گے۔ وفاقی حکومت کا سبسڈی نہ دینا ان کی کوئی کامیابی نہیں ماضی کی کابینہ کا فیصلہ تھا۔ ماضی کی وفاقی کابینہ نے فیصلہ کیا تھا کہ آیندہ کوئی سبسڈی نہیں دی جائے گی۔

ترجمان سندھ حکومت نے یہ بھی کہا کہ چینی کی قیمت میں اضافے سے 40.5 ارب روپے منافع کمایا گیا۔ عالمی وباء کے باعث سندھ کی صورت حال تشویشناک ہے، شاید وفاقی حکومت کی ترجیح انسانی جان سے زیادہ معیشت ہے۔

متعلقہ خبریں