جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبر

شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد ہونے کے خلاف درخواست پر نوٹس جاری

شہباز گل کے

اسلام آباد : عدالت نے شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ لینے کی ایڈوکیٹ جنرل کی درخواست پر شہباز گِل کو نوٹس جاری کردیا ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں اداروں میں بغاوت پر اکسانے کے الزام میں گرفتار شہباز گل کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد ہونے کے خلاف ایڈوکیٹ جنرل اسلام آباد کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ قائم مقام چیف جسٹس عامر فاروق نے درخواست کو سنا۔

سماعت کے موقع پر عدالت نے استفسار کیا کہ کیس سے متعلق بتائیں اب کس اسٹیج پر ہے؟ ایڈوکیٹ جنرل اسلام آباد بیرسٹر جہانگیر جدون نے ماتحت عدالت کے فیصلوں سے متعلق بتایا۔

بیرسٹر جہانگیر جدون نے کہا کہ شہباز گل کے ٹی وی چینل پر ایک بیان دیا، جس بیان حکومت نے سنجیدہ نوٹس لیا مقدمہ درج کیا، بیان میں اس ملک کے ایک اداروں کو ٹارگٹ کیا گیا۔ جن اداروں کے خلاف بیان دیا گیا۔ انہوں نے اس ملک کے لیے بہت قربانیاں دیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : آزادی کی حفاظت کیلئے خون کا آخری قطرہ تک بہائیں گے: وزیراعظم شہباز شریف

عدالت نے کہا کہ ایک حقیقت یہ ہے کہ آپ کی نظرثانی خارج ہوئی دوسرا فزیکل ریمانڈ ختم ہو چکا ہے۔

عدالت نے کہا کہ سب سے پہلے نظرثانی درخواست قابل سماعت نا ہونے سے متعلق دلائل دیں۔ وکیل راجہ رضوان عباسی نے دلائل دیئے کہ جوڈیشل مجسٹریٹ کے فیصلے کے خلاف نظرثانی قابل سماعت ہے۔

عدالت نے کہا کہ آپ یہ کہہ رہے ہیں کہ ملزم کا مزید فزیکل ریمانڈ ضروری ہے؟ آپ نے مزید فزیکل ریمانڈ میں کیا کرنا ہے؟

عدالت نے شہباز گل کا جسمانی ریمانڈ لینے کی ایڈوکیٹ جنرل کی درخواست پر شہباز گِل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کل تک جواب طلب کرلیا۔

متعلقہ خبریں