پی ٹی ایم پر پابندی کی درخواست پر فریقین کو نوٹس جاری

اسلام آباد: ہائی کورٹ میں پی ٹی ایم پر پابندی عائد کرنےکیلئے دائر درخواست پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے تمام فریقین کو نوٹسز جاری کرکے جواب طلب کرلیا۔ عدالت نے فریقین کو تین جون تک جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

پی ٹی ایم پر پابندی عائد کرنےکیلئے دائر درخواست پر سماعت ہوئی۔ کیس کی سماعت جسٹس عامر فاروق نے کی۔ ہائی کورٹ کے مطابق ادارے اپنے قوانین پر سختی سے مکمل عمل درآمد کریں۔

جبکہ عدالت نے تمام فریقین کو نوٹسز جاری کرکے جواب طلب کرلیا۔ وزارت داخلہ، پی ٹی اے اور پیمرا اپنے قوانین پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں۔

عدالت نے وزارت داخلہ سے تحریری جواب طلب کرلیا جب کہ دیگر فریقین سمیت منظور پشتین، علی وزیر اور محسن داوڑ سے بھی جواب طلب کیا گیا ہے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے فریقین کو 3 جون تک جواب جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔ عدالت نے حکم دیا ہےکہ وزارت داخلہ، پی ٹی اے اور پیمرا اپنے قوانین پر عملدرآمد یقینی بنائیں۔