جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

اب کراچی کے سارے فیصلے منتخب میئر کو ہی کرنے چائیے : حافظ نعیم الرحمٰن

اب کراچی کے

کراچی : جماعت اسلامی کا کہنا ہے کہ بلدیاتی الیکشن مذاق نہیں ہے، یہ ہماری زندگی کا مسئلہ ہے، اب کراچی کے سارے فیصلے کراچی کے منتخب میئر کو ہی کرنے چائیے۔

امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا ہے کہ ہم چاہتے ہیں فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز کو ختم ہونا چاہیئے، ہم عوامی ریفرنڈم کے نتیجے میں آنے والی رائے کو عدالت کے سامنے پیش کریں گے۔ آج ریفرنڈم کا آخری دن ہے تو عوام بڑھ چڑھ اپنی رائے دے۔

انہوں نے کہا کہ مرتضیٰ وہاب عدالت کے فیصلے پر غلط فہمی پیدا کر رہے ہیں۔ تمام بلدیاتی ادارے ان کے قبضے میں ہیں۔ اتنا سب ہونے کے بعد انہیں استعفی دینا چاہیئے، اس میں مظلوم بننے کی کیا ضرورت ہے؟

یہ بھی پڑھیں : کراچی میں ڈکیتی کا نیا طریقہ، بچوں کے ساتھ گھر میں داخل ہو کر لوٹ مار

ان کا کہنا تھا کہ عوام کے مسائل پر کوئی قانون سازی نہیں کی گئی ہے۔ پیپلز پارٹی سب سے زیادہ قبضہ سسٹم رکھتی ہے۔ مرتضی وہاب تین ارب روپوں کے لئے آنسو بہا رہے ہیں۔ انفرا اسٹرکچر میں 80 بلین ڈالر کی انکم ہوئی ہے۔ بل بورڈز کے جو پیسے آتے ہیں وہ کہاں ہیں؟

جماعت اسلامی کے رہنماء نے مرتضیٰ وہاب کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ موٹر وہیکل ٹیکس صوبائی حکومت لیتی ہے۔ آپ جس اختیار کا رونا رو رہے ہیں، وہ آپ کی پارٹی کھا رہی ہے۔

حافظ نعیم الرحمٰن کا کہنا تھا کہ اب کراچی کے سارے فیصلے کراچی کے منتخب میئر کو کرنے چائیے۔ کراچی میں الیکشن کروانے سے مراد علی شاہ کیسے روک سکتے ہیں؟ یہ الیکشن مذاق نہیں ہے، یہ ہماری زندگی کا مسئلہ ہے۔ الیکشن کے آگے بڑھنے کا کوئی جواز نہیں ہے۔

متعلقہ خبریں