جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

اپوزیشن تھک کر مذاکرات کے لیئے آئیگی، تحریک کا مقصد این آر او لینا ہے : فواد چوہدری

تھک کر مذاکرات

لاہور : فواد چوہدری نے کہا ہے کہ اپوزیشن اب معاملات کو مذاکرات سے حل نہیں کریں گے، تو پھر تھک کر ہی آئیں گے، اپوزیشن کی تحریک کا مقصد این آر او لینا ہے۔

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کے فروغ سے ترقی کے منازل طے کرسکتے ہیں۔ کورونا کی وجہ سے فلمی صنعت کو نقصان پہنچا۔ ہم نے فیصل آباد میں میڈیکل سٹی بنایا، ہم میڈیکل صنعت میں خود کفیل ہونے کی کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ طبی آلات پہلے ادھر نہیں بنتے تھے اب ہم نے نئی صنعتیں بنائی ہیں۔ ہمیں ڈیجیٹل اور بائیو ٹیکنالوجیز کی طرف جانا ہوگا۔ ڈرونز کی پالیسی کی وزیراعظم منظور کر دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کی تحریک سے ملکی معیشت کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ پی ڈی ایم معاملات کو سڑکوں پر حل کرنے کی خواہاں ہے۔ کہا جارہا ہے عمران خان جارہے ہیں۔ میں کہہ رہا ہوں کوئی جارہا ہے نہ ہی آرہا ہے۔ سیاسی ڈرامے کرپشن کے بچاؤ کے لیے کیے جارہے ہیں۔ اگر یہ اب معاملات کو مذاکرات سے حل نہیں کریں گے پھر تھک کر ہی آئیں گے۔ اپوزیشن کی تحریک کا مقصد این آر او لینا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سیاست میں مذاکرات ختم نہیں کئے جا سکتے، جھاڑو پھرنے کی بات پر قائم ہوں : شیخ رشید

فواد چوہدری نے کہا کہ نواز شریف 15 جنوری سے پہلے آرہے ہیں۔ برطانیہ کی وزیر داخلہ کو خط لکھا گیا ہے کہ نواز شریف کو ڈی پورٹ کیا جائے۔ برطانیہ میں بحث چل رہی ہے کہ کرپٹ سیاست دانوں کو واپس بھیجا جائے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ہم نے یا پیمرا نے نواز شریف کہ بیان کو نہیں روکا۔ نواز شریف ہندوستان کے بیانیے کو پروموٹ کر رہے ہیں۔ ہندوستان کا بیانیہ یہ ہے کہ فوج دخل اندازی کرتی ہے۔ برطانوی قوانین کے مطابق نواز شریف خود ہی واپس آ جائیں گے۔

وزیر سائنس و ٹیکنالوجی نے کہا کہ پی ایم ایل این کو چاہیے سپریم کورٹ جائے اور فیصلہ واپس کرالے۔ وزیراعظم کہتے ہیں مجھے کوئی اعتراض نہیں کہ آرمی چیف اپوزیشن سے ملیں یا کسی سے بھی۔ آرمی چیف پی ٹی آئی کے آرمی چیف نہیں پورے ملک کے آرمی چیف ہیں۔ سوال ہی پیدا نہیں ہوتا صحافی کے اغواء کی کسی سرگرمی میں حکومت کا ہاتھ ہو۔

متعلقہ خبریں