جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

ٹیسٹ سیریز سے قبل سائیڈ میچ، پاکستان اور آسٹریلیا اے کا مقابلہ

ٹیسٹ سیریز

پرتھ : آسٹریلیا میں اظہر علی الیون کی صلاحیتوں کا پہلا امتحان، ٹیسٹ سیریز سے پہلے پاکستانی ٹیم اور آسٹریلیا اے کا مقابلہ، کپتان اظہر علی ٹیسٹ سیریز میں بہتر کارکردگی دکھانے کے لئے پر امید ہیں۔

پاکستان نے اپنی بیسٹ الیون کو سائیڈ میچ میں موقع دیا ہے۔ قومی ٹیم میں نوجوان بالرز کوبھی جگہ دی گئی ہے۔

کپتان اظہر علی کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں ٹیم بہتر کارکردگی دکھائے گی، پاکستان کی ٹیسٹ ٹیم میں کافی تجربہ کار کھلاڑی موجود ہیں۔ بالنگ اٹیک میں نوجوان بالرز باصلاحیت ہیں، امید ہے نتائج مختصر فارمیٹ سے مختلف رہیں گے۔

یہ بھی پڑھیں : دورہ آسٹریلیا : ٹیسٹ سیریز کے لیئے قومی کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی آسٹریلیا روانہ

پاکستان کی جانب سے سائیڈ میچ میں شان مسعود، اظہر علی، حارث سہیل، اسد شفیق، افتخار احمد، بابر اعظم، محمد رضوان، یاسر شاہ، شاہین شاہ آفریدی، نسیم شاہ اور عمران خان شامل ہیں۔

واضح رہے کہ آسٹریلیا نے تیسرے ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان کو دس وکٹوں سے شکست دے کر سیریز دو صفر سے جیت لی تھی۔ پاکستان کی بیٹنگ بالنگ اور فیلڈنگ میں بری طرح ناکام رہی۔

آسٹریلیا کے شہر پرتھ میں کھیلے گئے تیسرے ٹی 20 میں آسٹریلوی کپتان ایرون فنچ نے ٹاس جیت کر پاکستان کی ٹیم کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔

کپتان بابر اعظم اور امام الحق نے نے اننگ کا آغاز کیا، لیکن بابر اعظم نے خلاف توقع دوسرے ہی اوور میں 6 رنز پر اپنی  وکٹ دے دی۔

بابر اعظم کے بعد وکٹ کیپر محمد رضوان آئے بغیر کوئی رنز بنائے پوولین واپس لوٹ گئے۔ حارث سہیل نے صورتحال کو سنبھالنے کی کوشش کی، لیکن امام الحق غلط شاٹ کھیل کر 14 رنز کے ساتھ گراؤنڈ سے چلے گئے۔

حارث سہیل 8 رنز، خوشدل شاہ 8، عماد وسیم 6، افتخار احمد 45 اور شاداب خان ایک رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

امام الحق کے بعد افتخار حسین نے بیٹنگ کا آغاز کیا لیکن حارث سہیل 54 کے مجموعی اسکور پر نویں اوور میں 8 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے۔

عماد وسیم کے بعد افتخار احمد 92 کے مجموعی اسکور پر 45 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ شاداب خان صرف ایک رن ہی بناسکے۔ قومی ٹیم نے 8 کھلاڑیوں کے نقصان پر مقررہ 20 اوورز میں 107 رنز کا ہدف دیا۔

ہدف کے تعاقب میں آسٹریلوی ٹیم نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا آغاز کیا اور جارحانہ کھیل پیش کرتے ہوئے بغیر کسی نقصان کے ہدف کو پورا کرلیا۔

پاکستان کی ٹیم میں 4 تبدیلیاں کی گئی تھیں اور فخر زمان، آصف علی، محمد عرفان اور وہاب ریاض کی جگہ امام الحق، خوشدل شاہ، محمد حسنین اور محمد موسیٰ کو شامل کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں