جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ امریکی پابندیوں کے باعث رک گیا : وزارت توانائی

اسلام آباد : وزارت توانائی کا کہنا ہے کہ پاک ایران گیس پائپ لائن کا منصوبہ امریکی پابندیوں کے باعث رک گیا ہے۔

سینیٹ کے اجلاس کے موقع پر وزارت توانائی نے تحریری جواب جمع کرادیا، جس میں بتایا گیا ہے کہ ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے پر کام ایران پر امریکی پابندیوں کے باعث رک گیا ہے۔

جواب میں بتایا گیا کہ وفاقی کابینہ کی منظوری کے ساتھ ایران اور پاکستان نے گیس پائپ لائن ترمیمی معاہدے پر دستخط کیئے۔ ترمیمی معاہدے کے تحت پاکستان اور ایران کو منصوبہ مکمل کرنے مزید پانچ سال کا عرصہ دیا جائے گا۔ منصوبے پر پیش رفت امریکی پابندیاں اٹھائے جانے سے وابسطہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان کا پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر کام جاری رکھنے سے انکار

تیل و گیس سے متعلق وزارت کے جواب میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں تیل اور گیس کی تلاش کے شعبے میں پچاس کمپنیاں کام کر رہی ہیں۔ تیل اور گیس تلاش کرنے والی کمپنیوں میں 15 مقامی اور 35 غیر ملکی کمپنیاں ہیں۔

وزارت کے مطابق گیس کی تلاش میں کیکڑا ون بلاک کی 5693 میٹر گہرائی تک کھدائی کی گئی، بدقسمتی سے کیکڑا ون کا کنوں خشک تھا۔ اس وقت گہرے سمندر میں تیل اور گیس کی تلاش کے 12 بلاکس ہیں۔ یہ بلاکس وزارت دفاع سے سکیورٹی کلئیرنس کے بعد منظور کیے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں