جی ٹی وی نیٹ ورک
کالمز و بلاگز

پاکستانیوں کی اجتماعی خوشی کا نام کرکٹ ہے !

پاکستانیوں کی اجتماعی خوشی
پاکستانی پاکستان سے بہت محبت کرتے ہیں مگر ایک تلخ حقیقت یہ بھی ہے کہ پاکستانیوں میں آپسی اختلافات بھی وجود رکھتے ہیں۔ یہ اختلاف مسلکی بھی ہیں، لسانی بھی ہیں ، مذہبی بھی ہیں ،لیکن یہ اختلاف اجتماعی طور پر ہر فکر میں موجود نہیں ہے بلکہ ہر طبقے فکر سے تعلق رکھنے والے کچھ لوگوں میں ہے۔

 

بہرحال اختلافات میں کوئی قباحت نہیں البتہ اختلافات فکری اور نظریےکی حد تک ہو تو کوئی مضائقہ نہیں البتہ تلخ کلامی اور اس سے بات آگے جائے تو یہ غیر شعوری حرکت کہلائی جاتی ہے۔

 

یہ پڑھیں :  کھیل کا میدان بہتر ہے جنگ کے میدان سے

 

تمام پاکستانی ایک موقع پر ایک ہوتے ہیں، جب نہ مذہب آڑے آتا ہے اور نہ مسلک ، نہ زبان آڑے آتی ہے اور نہ علاقہ ، سب پاکستانیوں کی ایک ہی خواہش ہوتی ہےکہ آج کا میچ، آج کا کرکٹ میچ پاکستان جیتے اور جب میچ پاکستان اور بھارت کو ہو تو یہ جذبات 1000 گنا بڑھ جاتے ہیں۔

 

جی ہاں، کرکٹ کا کھیل ہو اور پاکستانی کرکٹ ٹیم ہو ، مقابلہ بھارت سے ہو تو ہم تمام پاکستانی ایک پیج پر ہوتے ہیں اور خواہش اور دعا ایک ہی ہوتی ہے کہ یا اللہ پاکستان کو جتوادیجئے اور اس بار دعائیں اور ٹیم کی محنت رنگ لے آئی اور پاکستان نے انڈیا کو دھول بھی چٹادی۔ اور تو اور جس ٹیم نے سیکیورٹی کا بہانابنایا تھا اور ملک سے بھاگ گئی تھی اس کو بھی تازہ تازہ شکست دے کران کی سیکیورٹی بھی ٹائٹ کردی ہے۔

 

Pakistani nation and cricket obsession urdu blog

 

کرکٹ کا معاملہ ہو تو تما م پاکستانی بے چین و بے تاب رہتے ہیں۔پاکستانی مسلمان مسجد میں دعا کرتا ہے، پاکستانی عیسائی گرجا گھروں میں دعا کرتے ہیں ، پاکستانی ہندو مندروں میں دعا کرتے ہیں ۔ کرکٹ کے معاملے میں نہ کوئی مسلک ہوتا ہے اور نہ لسانیت کیونکہ پاکستانیوں کی اجتماعی خوشی کا نام کرکٹ ہے۔

 

مہاجر کو شاہین آفریدی بھی پسند آتا ہے ، سندھی کو بابر اعظم بھی پسند آتا ہے ، پنجابی کو سرفراز احمد بھی پسند آتا ہے۔ کرکٹ کے معاملے میں تمام پاکستانی ایک پیج پر ہوتے ہیں البتہ کرکٹ والے اختلافات تو ہوتے ہی ہوتے ہیں اور اس ا ختلاف پر گرم ہونے کا الگ مزہ ہے۔

 

اس بارے میں جانئے : عوام کو کچھ سمجھ نہیں آتا سوائے مہنگائی کے

 

اس دور بے چینی اور نفسانفسی کے عالم میں کرکٹ ہی واحد ایسی چیز بچی ہے جہاں پاکستانی تمام اختلافات کو بالائے طاق رکھ کے کرکٹ میں مگن ہوجاتے ہیں۔ بظاہر ان تمام پاکستانیوں کو کرکٹ ٹیم کی ہار یا جیت سے فرق نہیں پڑے گا۔ ٹیم کی جیت سے نہ ان کو بونس ملے گا اور نہ ٹیم کی ہار سے ان کے سیلری کٹے گی۔

 

مگر یہ کہ کرکٹ ٹیم کی جیت پر یہ جشن منائیں گے ۔ تمام مشکلات کو کچھ لمحے بھول کر پاکستان کا جھنڈا لہرائیں گے ، چہرے پر مسکراہٹ سجائیں گے، دوسرے پاکستانی سے گلے ملیں گے۔کیونکہ یہ پاکستانی ہے اور ان کا ملک میچ جیتا ہے اور جس سے محبت ہوتی ہے اس کی جیت پر خوشی بھی ہوتی ہے اور جشن بھی منایا جاتا ہے۔

 

 

آج کل ویسے بھی پاکستانی مہنگائی کی وجہ سے بہت پریشان ہیں مگر ان سب کے باوجود وہ چند گھنٹے اس مہنگائی کی مشکلات کو بھول کر میچ میں مگن ہوجاتے ہیں اور جیت پر خوشیاں مناتے ہیں۔

 

بلاشبہ کرکٹ کا کھیل یعنی پاکستانیوں کی اجتماعی خوشی اور محبت کا نام ہے ، جیسے بریانی کے نام پر تمام پاکستانی ایک پیج پر ہے اسی طرح کرکٹ بھی وہ واحد پیچ ہے جہاں تمام پاکستانیوں کے قلب ایک ساتھ دھڑکتے ہیں۔

 

نوٹ : جی ٹی وی نیٹ ورک اور اس کی پالیسی کا لکھاری اور نیچے دئے گئے کمنٹس سے متّفق ہونا ضروری نہیں۔

 

متعلقہ خبریں