جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبر

پاکستان کا بھارت میں ہونے والے 44ویں شطرنج اولمپیاڈ میں احتجاجاً شرکت نہ کرنے کا فیصلہ

44ویں شطرنج اولمپیاڈ

اسلام آباد : پاکستان نے بھارتی شہر چنئی میں منعقد ہونے والے 44ویں شطرنج اولمپیاڈ کو سیاسی رنگ دینے کی بھارتی کوششوں کی مذمت کی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق انٹرنیشنل چیس فیڈریشن چنئی میں منعقد ہونے والے شطرنج اولمپیاڈ میں شرکت کے لیے پاکستان کو مدعو کیا گیا تھا۔ پاکستانی دستہ پہلے ہی اس ایونٹ کے لیے تربیت کر رہا تھا۔ بھارت نے اس باوقار بین الاقوامی کھیلوں کے ایونٹ کو سیاسی رنگ دینے کا انتخاب کیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ ایونٹ کی ٹارچ ریلے کو 21 جولائی کو مقبوضہ جموں و کشمیر کے شہر سرینگر سے گزارا گیا۔ علاقے کی عالمی سطح پر تسلیم شدہ "متنازعہ” حیثیت کو نظر انداز کرتے ہوئے، ہندوستان نے دھوکہ دہی کا ارتکاب کیا۔ جسے بین الاقوامی برادری کسی بھی صورت میں قبول نہیں کر سکتی۔

یہ بھی پڑھیں : شنگھائی تعاون تنظیم کا اجلاس، بلاول بھٹو کی بھارتی ہم منصب سے غیر رسمی ملاقات کا امکان

دفتر خارجہ نے کہا کہ جموں و کشمیر پر 1947 سے بھارت کے زبردستی اور غیر قانونی قبضے میں ہے۔ یہ تنازعہ سات دہائیوں سے زیادہ عرصے سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر موجود ہے۔پاکستان بھارت کی سیاست کو کھیلوں سے ملانے کی مذموم کوشش کی مذمت کرتا ہے۔

ترجمان کے مطابق احتجاج کے طور پر پاکستان نے 44ویں شطرنج اولمپیاڈ میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ معاملے کو انٹرنیشنل چیس فیڈریشن کے ساتھ بھی اعلیٰ سطح پر اٹھائیں گے۔

متعلقہ خبریں