جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

محنت سے حاصل امن کی ہر قیمت پر حفاظت کی جائے گی : آرمی چیف

محنت سے حاصل

اسلام آباد : آرمی چیف کا کہنا ہے کہ قربانیوں کو یاد رکھا جاتا ہے، محنت سے حاصل امن کی ہر قیمت پر حفاظت کی جائے گی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 8ویں نیشنل ورکشاپ بلوچستان کے شرکاء سے ملاقات کی۔ ورکشاپ میں مختلف شعبوں، طبقات سے وابستہ لوگوں نے شرکت کی۔ ورکشاپ 27 نومبر تک کوئٹہ میں جاری رہے گی۔

اس موقع پر آرمی چیف نے کہا کہ دہشت گردی کو شکست دینے میں قوم کی قربانیوں کو یاد رکھا جاتا ہے۔ محنت سے حاصل امن کی ہر قیمت پر حفاظت کی جائے گی۔ بلوچستان کے عوام کی حمایت سے صوبے میں استحکام آیا۔

یہ بھی پڑھیں : بلوچستان میں کورونا ویکسینیشن بڑھانے کیلئے فوج کی مدد حاصل کرنے کا فیصلہ

جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ صوبے میں سماجی و اقتصادی ترقی کے منصوبوں پر پیش رفت ہوئی ہے۔ پاکستان کے امن کیلئے دشمن قوتوں کے مذموم عزائم ناکام ہوں گے۔ دشمنوں کے عزائم ہم آہنگی، جامع حکمت عملی سے ناکام بنارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ درپیش اندرونی و بیرونی چیلنجز جامع قومی ردعمل کا تقاضا کرتے ہیں۔ ویسٹرن زون کے مؤثر انتظام سے پاکستان افغان بحران سے محفوظ رہا۔

خیال رہے کہ جہاں عسکری قوت قانون کی حکمرانی کے لیئے اپنی محنت کر رہی ہیں، وہیں حکومت کی جانب سے بھی ناراض بلوچوں سے مذاکرات کی کوششیں کی جارہی ہیں۔

رواں سال جولائی میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کابینہ کے اجلاس کے بعد صحافیوں کو بتایا تھا کہ بلوچستان میں ناراض عناصر سے بات چیت پر کام جاری ہے، تاہم ان عناصر سے بات چیت ہو گی جو انڈیا سے رابطے میں نہیں ہیں۔

وزیراعظم کی جانب سے عوامی جمہوری وطن پارٹی کے رہنما شاہ زین بگٹی کو مفاہمت کے لیئے معاون مقرر کیا گیا۔

حکومت کے قریبی حلقے اور بیرون ملک سرگرم بلوچ کارکنوں کا دعویٰ ہے کہ براہمداغ بگٹی سے رابطے ہوئے ہیں تاہم اس کی تصدیق نہیں ہو سکی۔

نواز شریف کے دور حکومت میں بھی مذاکرات کیے گئے تھے، اس وقت ڈاکٹر مالک بلوچ وزیر اعلیٰ بلوچستان تھے۔

اس حوالے سے ڈاکٹر مالک کا کہنا ہے کہ پہلے مرحلے میں براہمداغ بگٹی اور خان آف قلات سے مذاکرات ہوئے، جن میں سے براہمداغ بگٹی نے جو مطالبات رکھے وہ عام سے تھے، جو صوبائی حکومت بھی حل کر سکتی تھی، لیکن مزید پیشرفت نہیں ہوئی۔

متعلقہ خبریں