جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبر

ماضی میں جھانکنے اور رونے سے کچھ نہیں ہوگا، ہمیں اپنی اصلاح کرنی ہے : وزیر اعظم

ماضی میں جھانکنے

اسلام آباد : شہباز شریف کا کہنا ہے کہ پچھلی حکومت نے آئی ایم ایف سے معاہدے کی دھجیاں بکھیر دیں، ماضی میں جھانکنے اور رونے دھونے سے کچھ نہیں ہوگا۔ ہمیں اپنی اصلاح کرنی ہے۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے (ن) لیگی سینیٹرز سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال کے حوالے سے آپ لوگوں کو اعتماد میں لینے کیلئے بلایا گیا ہے۔ ہمارا مؤقف تھا ریفارمز کرکے الیکشن کی طرف جائیں گے۔ باقی پارٹیوں کا فیصلہ تھا پورا ٹرم مکمل کرنا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ تمام جماعتوں کا اتفاق ہے حکومت 14 ماہ پورے کرے گی۔ حکومت سنبھالنے کے بعد کئی چیلنجز کا سامنا تھا۔ پچھلی حکومت نے آئی ایم ایف سے معاہدے کی دھجیاں بکھیر دیں۔ ساڑھے تین سال ان کو یاد نہیں آیا کہ غریبوں کو ریلیف دے سکیں۔

یہ بھی پڑھیں : چینی حکومت کا شکریہ ،چین سے چند دنوں میں 2.3 ارب ڈالر مل جائیں گے : مفتاح اسماعیل

ان کا کہنا تھا کہ جب عالمی سطح پر قیمتیں بڑھیں تو انہوں نے 10 روپے پیٹرول سستا کردیا۔ مارچ میں انہیں شکست نظر آئی تو انہوں نے تیل کی قیمت کم کردی۔ انہوں نے آنے والی نئی حکومت کے لیے جال بچھایا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان میں جو افراد، حکومتیں آئیں قائد اعظم کا خواب شرمندہ تعبیر نہ کرسکے پاکستان کے آس پاس ممالک ہم سے کئی آگے نکل گئے۔ چین موجودہ مشکل حالات میں پاکستان کو قرض فراہم کر رہا ہے۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ چیلنجز بے پناہ ہیں کیونکہ 75 سال کی طرح ہم آج بھی کشکول لے کر گئے۔ چین نے ہمارا ہر مشکل گھڑی میں ساتھ دیا۔ ماضی میں جھانکنے اور رونے دھونے سے کچھ نہیں ہوگا۔ ہمیں اپنی اصلاح کرنی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اللہ کا حکم ہے اسی قوم کی تقدیر بدلتی ہے جو خود اوپر اٹھتی ہے۔ اس قوم کو اللہ تعالیٰ نے بے پناہ قدرتی وسائل سے مالا مال کیا ہے۔ ریکوڈک میں اربوں، کھربوں ڈالر کے خزانے دفن ہیں مگر آج تک نہیں نکال سکے۔ یہ قوم کا قصور نہیں بلکہ تمام قیادت کا قصور ہے جو ریکوڈک کا خزانہ نہیں نکال سکی۔

متعلقہ خبریں