جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پرویز مشرف سنگین غداری کیس کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہوگی

پرویز مشرف سنگین

اسلام آباد : خصوصی عدالت نے کہا ہے کہ پرویز مشرف سنگین غداری کیس کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہوگی، ہم صرف سپریم کورٹ کے احکامات کے پابند ہیں۔

اسلام آباد کی خصوصی عدالت میں پرویز مشرف سنگین غداری کیس کی سماعت ہوئی۔ وزارت داخلہ کے نمائندے بھی عدالت میں پیش ہوئے۔ سماعت کے دوران تحریری جواب جمع نہ کرانے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا۔

سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ہم نے بریت کی درخواست دائر کررکھی ہے۔ جسٹس وقار احمد سیٹھ نے کہا کہ آپ نے ہمارے احکامات نہیں پڑھے۔ ہم ہائی کورٹ کے فیصلے پر کوئی تبصرہ نہیں کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں : آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع اور پرویز مشرف غداری کیس کے خلاف وکلاء کی ہڑتال

جسٹس وقار احمد سیٹھ نے کہا کہ ہائی کورٹ نے اپ کو 5 دسمبر تک پراسیکیوشن تعینات کرنے کا حکم دیا ہےْ ہم 5 دسمبر کے بعد اپ کو مزید وقت نہیں دیں گے۔ پرویز مشرف اگلی سماعت سے قبل جب چاہے آکر بیان ریکارڈ کراسکتے ہیں۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ نے مزید کہا کہ اگلی سماعت تک بیان ریکارڈ کرانے کا موقع دے رہے ہیں۔ آئندہ سماعت کے بعد کوئی درخواست نہیں لیں گے۔

جسٹس شاہد کریم نے کہا کہ ہم ہائی کورٹ کے فیصلے پر عملدرامد کے پابند نہیں۔ ہم صرف سپریم کورٹ کے احکامات کے پابند ہیں۔ پانچ دسمبر کے بعد سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہوگی۔  

خصوصی عدالت نے کہا کہ پانچ دسمبر سے پہلے کسی بھی دن پرویز مشرف چوبیس گھنٹے پہلے اپنا بیان ریکارڈ کراسکتے ہیں۔  

عدالت نے احکامات دیئے کہ پراسیکیوشن ٹیم مکمل تیاری کے ساتھ آئندہ سماعت پر پیش ہو۔ پرویز مشرف کے وکیل اور سرکاری وکیل اپنے دلائل مکمل کریں گے۔ جتنی بھی درخواستیں ہیں مرکزی کیس کے ساتھ سنیں گے۔

متعلقہ خبریں