جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پنجاب میں مافیا سے مقابلہ تھا، اس لیے سندھ میں توجہ دینے کا موقع نہیں ملا : وزیر اعظم

پنجاب میں مافیا

سکھر : وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ پنجاب میں بڑے مافیا سے مقابلہ تھا، اس لیے الیکشن کے دوران سندھ میں توجہ دینے کا موقع نہیں ملا۔

وزیر اعظم عمران خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سندھ آنے پر بہت خوشی ہوئی۔ جب سے وزیراعظم بنا ہوں اندرون سندھ آنے کا موقع نہیں ملا، زیادہ آنا چاہتا تھا، بدقسمتی سے نہیں آسکا۔ اندرون سندھ پسماندہ ترین علاقوں میں شامل ہے۔ قبائلی اضلاع اور بلوچستان میں بہت غربت ہے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ میں لوگ مشکل حالات میں زندگی گزار رہے ہیں۔ عوام کو بنیادی حقوق میسر نہیں۔ پولیس کے ذریعے عوام پر ظلم ہوتا ہے۔ سندھ میں لوگوں کو مشکل حالات میں جیتے دیکھا ہے۔ اندرون سندھ کے لوگ بہت پیچھے رہ گئے۔ سندھ کے گاؤں آگے جانے کے بجائے پیچھے جارہے ہیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پنجاب میں بڑے مافیا سے مقابلہ تھا اس لیے سندھ میں ہمیں الیکشن میں توجہ دینے کا موقع نہیں ملا۔

یہ بھی پڑھیں : ایس او پیز پر عمل نہیں ہورہا، لوگوں کے دلوں سے کورونا کا خوف ختم ہوگیا : اسد عمر

ان کا کہنا تھا کہ حکومت آئی تو پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا قرض چڑھا ہوا تھا۔ ہم نے ڈھائی سال میں 35 ہزار ارب روپے واپس کیئے۔ سندھ کیلئے 446 ارب کا پیکیج اِدھر اُدھر سے پیسے کھینچ کر بنایا۔ یہ پیکیج وفاق اپنی طرف سے دے رہا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ نوجوانوں کو اسکلز ایجوکیشن دینے پر خوشی ہے۔ کوشش ہے نوجوانوں کو اپنے پیروں پر کھڑا کریں۔ نیوزی لینڈ کی آبادی 50 سے 60 لاکھ ہے۔ نیوزی لینڈ میں ہم سے زیادہ کھیلوں کے میدان ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ حیدرآباد سکھر موٹروے سے سندھ اور پاکستان کے لوگوں کو فائدہ ہوگا۔ لاک ڈاؤن کی وجہ سے پورے ملک میں غربت بڑھی۔ احساس ایمرجنسی کیش کا 33 فیصد فنڈز سندھ کو دیا۔ روپیہ مضبوط ہونے سے پیٹرول کی قیمت کم ہوگئی۔

انہوں نے کہا کہ جزیرے پر شہر بنانے کی تیاری کرلی، باہر سے سرمایہ کار آنے کیلئے تیار ہیں۔ سندھ حکومت نے ہمیں جزیرے پر این او سی بھی دے دیا اور پھر کینسل کردیا۔ جزیرے پر شہر بننے سے سندھ حکومت اور پاکستان کا فائدہ ہونا تھا۔ ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں کو احساس پروگرام میں شامل کررہے ہیں۔

متعلقہ خبریں