وزیر اعظم ایران کے دورے سے وطن واپس پہنچ گئے، کل سعودی عرب کا دورہ ہوگا

ایران کے

اسلام آباد: سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی کم کرانے کے کوشش کے سلسلے میں وزیر اعظم ایران کا دورہ کرنے کے بعد وطن واپس پہنچ گئے ہیں، عمران خان کل سعودی عرب کا دورہ کریں گے، جہاں وہ ایران میں ہونے والی بات چیت سے سعودی حکام کو آگاہ کریں گے۔

وزیر اعظم عمران خان ایران کا دورہ مکمل کرکے وطن واپس پہنچ گئے ہیں۔ وزیر اعظم گزشتہ روز ایک روزہ دورے پر ایران پہنچے تھے۔ جہاں ان کی ملاقات ایرانی صدر حسن روحانی اور سپریم لیڈر علی خامنہ ای سے ہوئیں تھیں۔

سپریم لیڈر علی خامنہ ای سے ہونے والی ملاقات میں وزیر اعظم نے کشمیریوں کی حمایت پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ امت مسلمہ کو بے شمار چیلنجز کا سامنا ہے، مسلم اقوام میں اتحاد و یکجہتی کا پیغام ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سعودی ایران کشیدگی : وزیراعظم عمران خان کل ایران کا دورہ کریں گے

ملاقات کے بعد مشترکہ اعلامیہ بھی جاری کیا گیا تھا، جس میں وزیر اعظم نے خلیجی ممالک کو کسی فوجی تنازع سے بچنے اور خلیجی ممالک میں تمام فریقین کو بات چیت سے مسائل حل کرنے پر زور دیا۔

اعلامیے کے مطابق وزیر اعظم نے پاکستان اور ایران کے درمیان تاریخی اور ثقافتی تعلقت تعلقات کی اہمیت کو اجاگر کیا اور مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کے فروغ کا اعادہ کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے صدر روحانی کو بھی پانچ اگست کے بھارتی اقدام سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال سے خطے کا امن و سلامتی خطرے میں ہے۔

ایران کے بعد وزیر اعظم عمران خان سعودی عرب کا دورہ کریں گے، جہاں وہ سعودی حکام کو ایرانی دورے اور ہونے والے بات چیت سے آگاہ کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان ریاض دورے کے موقع پر سعودی فرما نرواں شاہ سلمان اور ولی عہد محمد بن سلمان سے ملاقات کریں گے جس میں خطے میں بڑھتی کشیدگی پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔